.

شام کے شمالی شہر الباب میں بم دھماکا ، 14 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے شمالی شہر الباب میں ایک کار بم دھماکے میں نو شہریوں سمیت چودہ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ اس سرحدی شہر پر ترکی کی فوج کا کنٹرول ہے۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے اطلاع دی ہے کہ ہفتے کے روز اس کار بم حملے میں ایک بس اور ٹیکسی اسٹینڈ کو نشانہ بنایا گیا ہے۔فوری طور یہ واضح نہیں ہوا کہ یہ بم دھماکا کس گروپ نے کیا ہے اور نہ کسی گروپ نے اس کی ذمے داری قبول کی ہے۔

اس واقعے کے بعد ترکی کے سرکاری میڈیا نے دس افراد کی ہلاکت کی اطلاع دی ہے۔ترکی اور اس کے حامی شام کے باغی گروپوں نے تین فوجی کارروائیوں کے بعد جنگ زدہ ملک کے سرحدی علاقےمیں الباب سمیت متعدد شہروں اور قصبوں پر قبضہ کررکھا ہے۔

ترکی کی فوج نے 2018،2016 اور 2019ء میں تین مرتبہ شام کے شمال مشرقی اور شمال مغربی سرحدی علاقے میں کرد ملیشیا وائی پی جی کے خلاف کارروائی کی ہے۔اس نے حالیہ کارروائی اکتوبر میں کی تھی اور پانچ روز کے بعد کرد ملیشیا اور ترک فوج کے درمیان جنگ بندی ہوگئی تھی۔ترکی کی اس فوجی دراندازی کا مقصد شام کے سرحدی علاقے میں ایک محفوظ زون کا قیام ہے۔