.

اماراتی لہجے میں عربی بولنے والے جاپانی نے سعودی عرب کے دورے میں کیا کہا ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں زندگی گزارنے والے جاپانی باشندے "يونوبو كانيكو" نے اماراتی لہجے میں عربی بولنا سیکھ لیا۔ اس نے اپنا نام بدل کر "منصور" رکھ لیا اور وہ اب ایک مشہور کاروباری شخصیت بننے کے ساتھ مارکیٹنگ کے شعبے میں مشاورت کے حوالے سے معروف ہو چکا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے منصور نے بتایا کہ وہ سعودی عرب کے سوا بقیہ تمام عرب ممالک کا دورہ کر چکا تھا۔ منصور کے مطابق سیاحتی ویزے کھل جانے پر اس نے مملکت کا دورہ کیا ہے اور یہاں کے اہم سیاحتی اور قومی ورثے کے مقامات کے بارے میں آگاہی حاصل کی۔

جاپانی باشندے منصور نے مزید بتایا کہ "جب میں نے سعودی عرب کا دورہ کیا تو اہم سیاحتی مقامات گیا اور یہاں کے مشہور عوامی کھانوں کا تجربہ کیا۔ مجھے جریش، قرصان، حنینی اور کبسہ (پُلاؤ) بہت پسند آئے۔ سعودی عوام نے میرا بھرپور خیر مقدم کیا۔ انہوں نے میرے ساتھ تصاویر بنوائیں اور وہ میرے عربی زبان بولنے سے متاثر ہوئے۔ میں نے ان سے کئی الفاظ سیکھے۔ میرا عربی زبان سیکھنے کا سفر جاری ہے"۔

منصور کا کہنا ہے کہ وہ ریاض میں جاپانی مصنوعات کی دکان کھولنے کے علاوہ سعودی عرب کے لیے سیاحتی فروغ کے منصوبوں پر کام کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ سعودی عرب میں 48 گھنٹوں کے دوران منصور کو کئی دعوتیں موصول ہوئیں اور اس نے متعدد مشہور مقامات کا دورہ کیا۔ جاپانی باشندے کا کہنا ہے کہ وہ ایک بار پھر مملکت آئے گا تا کہ زیادہ طویل عرصہ گزار سکے اور اس دوران سعودی معاشرے کے رواجوں ، تمام قبائلی طبقوں اور درعیہ میں قدیم قومی ورثے سے متعارف ہو۔

منصور کے نام سے معروف جاپانی باشندہ (یونوبو کانیکو) سوشل میڈیا پر اماراتی لہجے میں عربی بولنے تک محدود نہیں رہنا چاہتا بلکہ وہ آئندہ چار برسوں کے دوران سعودی ثوب (چوغہ) پہننے اور عربی زبان میں مہارت حاصل کرنے کا عزم اور ارادہ رکھتا ہے۔