.

درعیہ گُھڑ سواری فیسٹول: سعودی عرب میں پہلی مرتبہ مرد اور خواتین کھلاڑی ایک ساتھ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں گُھڑ سواری کے میلے "درعیہ فیسٹول" کا آغاز جمعرات کے روز ہو رہا ہے۔ اس ایونٹ میں دنیا کے مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے 100 سے زیادہ مرد اور خواتین گھڑ سوار شرکت کریں گے۔ یہ کھلاڑی درعیہ فیسٹول میں زیادہ سے زیادہ پوائنٹس اسکور کرنے کی کوشش کریں گے جو انہیں 2020 میں ٹوکیو اولمپکس اور گھڑ سواری کی عالمی چیمپین شپ میں کوالیفائی کرنے میں مددگار ثابت ہوں۔

درعیہ گھڑ سواری فیسٹول کے سلسلے میں خصوصی پریس کانفرنس منگل کے روز منعقد ہوئی۔ کانفرنس میں میڈیا پرسنز کے گروپ اور گھڑ سواری کے کھیل کی نمائندہ شخصیات نے شرکت کی۔ اس موقع پر Saudi Arabian Equestrian Federation کے صدر شہزادہ عبداللہ بن فہد بن عبداللہ آل سعود نے ایونٹ سے متعلق تفصیلات بتائیں۔ اپنی گفتگو کے آغاز پر شہزادہ عبداللہ نے کھیلوں بالخصوص گھڑ سواری کے کھیل کے لیے بے پناہ سپورٹ پر سعودی فرماں روا، سعودی ولی عہد اور مملکت کی جنرل اسپورٹس اتھارٹی کے چیئرمین کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ سعودی عرب آج 4 اسٹار کیٹیگری کی عالمی گھڑ سواری چیمپین شپ کی میزبانی کر رہا ہے اور ہماری خواہش ہے کہ مستقبل میں مملکت گھڑ سواری کے کھیل کی قیادت کرے۔ مقابلے کے سلسلے میں تمام تر انتظامات اور تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں اور ہمی اس بات کے متمنی ہین کہ یہ فیسٹول کامیابی سے ہمکنار ہو۔ ہم مقابلے میں شریک مملکت کے تمام بیٹوں اور بیٹیوں کی کامیابی کے لیے دعا گو ہیں۔

درعیہ گھڑ سواری فیسٹول کا شمار سعودی عرب میں کھیلوں کے میدان میں ایک تاریخی ایونٹ کے طور پر ہوتا ہے۔ مملکت کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے جب مرد اور خواتین کھلاڑی ایک ساتھ مد مقابل ہوں گے۔

اس موقع پر گھڑ سواری سے تعلق رکھنے والے سعودی نوجوان مرد اور خواتین کھلاڑیوں نے درعیہ فیسٹول میں شرکت کے حوالے سے اپنی گہری مسرت کا اظہار کیا۔

درعیہ گھڑ سواری فیسٹول دو ہفتے جاری رہے گا۔