.

سعودی عرب : جازان میں 1600 میٹر کی بلندی پر کافی کے کھیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں نوجوانوں کا ایک گروپ مملکت میں کافی (Coffee) کی کاشت کے بارے میں جان کاری حاصل کرنے کے لیے مختلف علاقوں کا سفر کر رہا ہے۔ اسی سلسلے میں انہوں نے جازان صوبے میں الدائر ضلع کے پہاڑوں پر پڑاؤ ڈالا۔ یہ مقام سطح سمندر سے 1600 میٹر کی بلندی پر واقع ہے۔ مذکورہ پہاڑی علاقے میں چٹانوں کے بیچ زرعی اراضی میں کافی کے 13 ہزار سے زیادہ درخت موجود ہیں۔

الدائر کے لوگ کافی کے کھیتوں کا بہت خیال رکھتے ہیں کیوں کہ اس کے پودوں کو بلند علاقوں میں گرم ماحول کی ضرورت ہوتی ہے۔ یہاں "ريد مريم" کا مقام کافی کی پیداوار کے حوالے سے ایک اہم ترین جگہ شمار ہوتی ہے۔ یہاں پر کاشت ہونے والی کافی کی کوالٹی عالمی معیار کے لحاظ سے اعلی درجے کی ہوتی ہے۔

کافی کے درخت کا شمار عمر دراز درختوں میں ہوتا ہے جن میں بعض درختوں کی عمر 400 سال سے بھی زیادہ تک پہنچ جاتی ہے۔ کافی کا دانہ کاشت کے تیسرے سال پیدا ہوتا ہے۔ کافی کی کاشت پودا لگائے جانے کے بعد کئی مراحل سے گذرتی ہے۔ اس کی کٹائی کا سیزن اکتوبر کے اواخر سے شروع ہو کر تین ماہ تک جاری رہتا ہے۔ اس کے بعد سکھانے کا عمل ہوتا ہے اور پھر کافی کے دانوں کا چھلکا اتارا جاتا ہے۔ کافی کی پھلی کے اندر سے دو دانے نکلتے ہیں۔ اس کے بعد کافی کے ماہرین فروخت سے قبل مختلف طریقوں سے ذائقے کی جانچ کرتے ہیں۔