.

لبنان:حزب اللہ اور امل تحریک کے حامیوں کی بیروت میں پولیس سے جھڑپیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں حزب اللہ اور امل تحریک کے حامیوں کی پولیس سے جھڑپیں ہوئی ہیں۔ اس کے بعد فوج کو جائے وقوعہ پر طلب کر لیا گیا اوراس نے شہر کے رِنگ پُل کے علاقے میں بگڑتیی ہوئی صورت حال پر قابو پا لیا ہے۔

العربیہ نیوزکے نمایندے کی اطلاع کے مطابق حزب اللہ اور امل تحریک کے حامیوں نے بیروت کے وسطی علاقے میں واقع شہداء چوک اور رِنگ پُل کے نزدیک احتجاج کے لیے جمع ہونے والے مظاہرین پر دھاوا بول دیا تھا۔انھوں نے پُل کے نزدیک کھڑی کاروں پر پتھراؤکیا۔پولیس نے جب مداخلت کی تو ان دونوں شیعہ گروپوں کے حامیوں نے اس کی جانب بھی پتھراؤ شروع کردیا۔پھر پولیس نے انھیں منتشر کرنے کے لیے اشک آور گیس کے گولے پھینکے ہیں۔

لبنان کی داخلی سکیورٹی فورسز کا کہنا ہے کہ بعض افراد نے پولیس اہلکاروں پر حملہ کیا ہے اور ان کی جانب پٹاخے پھینکے ہیں۔لبنان کی سرکاری خبررساں ایجنسی این این اے کے مطابق فورسز نے کہا ہے کہ’’ان حملوں کا سلسلہ بند ہونا چاہیے،ورنہ سخت اقدامات کیے جائیں گے۔‘‘

لبنانی ریڈکراس کے مطابق پتھراؤ سے ایک پولیس اہلکار زخمی ہوگیا ہے۔واضح رہے کہ قبل ازیں حزب اللہ اور امل تحریک کے حامی بیروت میں حکومت مخالف احتجاجی مظاہرین پر بھی ایک سے زیادہ مرتبہ دھاوا بول چکے ہیں اور انھوں نے شہداء چوک میں احتجاجی مظاہرین کے دھرنا کیمپ کو اکھاڑ دیا تھا۔