.

ریاض میں مصنوعی ذہانت کے آئندہ عالمی اجلاس کی سرگرمیاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں آئندہ ماہ 23 سے 25 جنوری تک دارالحکومت ریاض میں Artathon مقابلے کا انعقاد ہو گا۔ مقابلے میں مصنوعی ذہانت کے میدان کے ماہرین ایک ہی چھت نیچے اکٹھا ہوں گے۔ اس دوران مقابلے کے شرکاء مصنوعی ذہانت کے ذریعے امتیازی خصوصیات کی حامل مصنوعات تیار کریں گے۔

واضح رہے کہ Artathon کا مقابلہ ریاض میں 30 اور 31 مارچ 2020 کو ہونے والے مصنوعی ذہانت کے عالمی اجلاس کا ایک ضمنی منصوبہ ہے۔ مقابلے میں 300 افراد شرکت کریں گے۔ ان میں سے 20 ٹیموں کا انتخاب کر کے انہیں بین الاقوامی ماہرین کی سپورٹ سے ایک تربیتی پروگرام مکمل کرایا جائے گا۔ اس کا مقصد مصنوعی ذہانت کے آلات اور مصنوعی ذہانت کے ذریعے ڈیزائننگ ٹکنالوجی کی تعلیم دینا ہے۔ یہ پروگرام 26 جنوری سے 30 مارچ تک جاری رہے گا۔ اس دوران ایجاد کی جانے والی مصنوعات کو آئندہ مارچ میں مصنوعی ذہانت کے عالمی اجلاس کی سرگرمیوں کے دوران ایک نمائش میں پیش کیا جائے گا۔ مصنوعی ذہانت کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی بین الاقوامی شخصیات پر مشتمل جیوری ان میں سے 10 بہترین مصنوعات کا انتخابات کرے گی ،،، اور ان مصنوعات کو تیار کرنے والی ٹیموں کو انعامات سے نوازا جائے گا۔

ڈیٹا اینڈ آرٹیفشل انٹیلی جنس سے متعلق سعودی اتھارٹی کے سربراہ ڈاکٹر عبدالله بن شرف الغامدی کے مطابق دنیا بھر میں آج عالمی سطح پر مصنوعی ذہانت سے متعلق متعدد فنی پروگرام دیکھے جا رہے ہیں اور یہ شعبہ روز بروز ترقی کی جانب گامزن ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ "مصنوعی ذہانت کو آج خاکہ سازی، مصوری، موسیقی کی تیاری اور شعری قصیدوں کے واسطے استعمال کیا جا رہا ہے۔ ہمارا مقصد یہ ہے کہ Artathon مقابلے کے ذریعے مصنوعی ذہانت کے مرکز کے طور پر سعودی عرب کی پوزیشن کو مضبوط بنایا جائے۔

ڈاکٹر الغامدی نے اپنی گفتگو کے اختتام پر باور کرایا کہ Artathon مقابلہ ایک دل چسپ اور جدت کی حامل سرگرمی ثابت ہو گی۔ اس سلسلے میں مرکزی ہدف یہ ہے کہ مصنوعی ذہانت کا دائرہ تجارت اور صنعت تک محدود نہ رہے بلکہ اس میں فنون، ثقافت اور کھیل وغیرہ کو بھی شامل کیا جائے۔

مذکورہ Artathon مقابلے میں دل چسپی رکھنے والے افراد انٹرنیٹ پر مصنوعی ذہانت کے عالمی اجلاس کی سرکاری ویب سائٹ پر دیے گئے درج ذیل لنک کے ذریعے 22 دسمبر 2019 سے 7 جنوری 2020 تک اپنی رجسٹریشن کروا سکتے ہیں.