.

سعودی ولی عہد کی زیر سرپرستی فقید المثال گھڑ دوڑ مقابلے کا انعقاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی زیرسرپرستی شاہ عبدالعزیز اسکوائر میں جنادریہ میلے کے تحت گھڑ دوڑ کے مقابلے کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ یہ گھڑ دوڑ مقابلہ "پروڈکشن اینڈ امپورٹرز برائے کراؤن پرنس کپ" کے عنوان سے منعقد کیا جا رہا ہے جسے گھڑ دوڑ کا سالانہ سب سے بڑا مقابلہ سمجھا جاتا ہے۔

ریس کی تقریب دس رنوں (دوڑ کے مقابلوں) پر مشتمل ہوگی جس میں نویں نصف حصے میں 2400 میٹر اور دسویں چکر کے لیے 2400میٹر کی مسافت طے کرنا ہوگی۔ اس مقابلے میں اول آنے والے گھوڑ سوار کو 9 لاکھ ریال انعام دیا جائےگا۔

سعودی پریس ایجنسی "ایس پی اے" کے مطابق ہارس ریس کلب انتظامیہ نے اس ریس کی تیاری مکمل کرنے کے بعد اس کا انعقاد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تمام ورکنگ کمیٹیوں نے اس بڑے ایونٹ کو کامیاب بنانے کے لیے پوری دلجمعی کے ساتھ کام کی تاکہ اس تاریخی ایونٹ کو مملکت قدیم گھوڑسواری کی روایت کو کامیابی سے آگے بڑھایا جا سکے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں ہارس ریس کلب کا قیام 1387 ہجری میں عمل میں آیا تھا۔ اس کلب کے زیرانتظام پہلا گھڑ دوڑ مقابلہ شاہ خالد بن عبد العزیز آل سعود کی سرپرستی میں اس وقت ہوا تھا جب وہ ولی عہد تھے۔

ریس کے ساتھ اہل خاندانوں کی شکل میں آنے والے زائرین اور بچوں کے لیے بہت سی سرگرمیاں اور تفریحی پرواگرامات بھی ہوں گے۔ علمی و ثقافتی تقریبات کے علاوہ مملکت کے مختلف علاقوں سے مشہور لوک داستانوں کے شوز اور آرٹ نمائشوں کا بھی اہتمام کیا جائے گا۔ کلب کی جانب سے مقابلے کے آخرمیں شرکاء میں انعامات اور میڈل بھی تقسیم کیے جائیں گے۔ ایک انعامی کار جسے شائقین کے لیے رکھا گیا ہے قرعہ اندازی میں جیتنے والے خوش نصیب کو دی جائے گی۔