.

دنیا کے سب سے بڑے ریتلے ریگستان میں طویل شاہراہ کا منصوبہ تکمیل کے قریب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں صحرائے رُبع الخالی کو دنیا کا سب سےبڑا ریتلا ریگستان قرار دیا جاتا ہے۔ اس ریگستان میں آئےروز ریت کے طوفان اٹھتے ہیں اوراس کے درمیان سڑک کی تعمیر سب سے مشکل مرحلہ تھا۔ تاہم سعودی عرب کے ماہرین تعمیرات نے یہ معجزہ بھی سچ کر دکھایا ہے۔

صحرائے ربع الخالی جسے ریتلے طوفانوں کی وجہ سے خوفناک اور بھیانک ریگستان قرار دیا جاتا ہےکے بیچوں بیچ سعودی عرب نے 790 کلو میٹر طویل سڑک تیارکرکے حقیقی معنوں میں معجزہ کر دکھایا ہے۔ دنیا کے سب سے بڑے اور وسیع عریض ریتلے صحرا میں روڈ "انجینئرنگ کا معجزہ" سمجھا جاتا ہے۔ اس میں تیار کی جانے والی سڑک کو تمام ضروری لوازمات سے آراستہ کیا گیا ہے۔ پوری سڑک کےدونوں اطراف میں روشنی کا انتظام کیا گیا اور ٹریفک سیفٹی اشارے بھی لگائے گئے ہیں۔ اس سڑک کی تعمیر نے مسافروں کے لیے 800 کلو میٹرکی مسافت کم کردی ہے۔

نجران کے گورنر شہزادہ جلوی بن عبد العزیز بن مساعد نے صحرائی روڈ اور اس پرہونے والے کام کی پیش رفت کا جائزہ لیا۔اس موقع پرانہیں بتایا گیا کہ سڑک کا تعمیراتی کام 90 فیصد مکمل ہوچکا ہے۔ سلطنت عمان کی سرحدی گذرگاہ ام الزمول تک سڑک کا کام تیزی کے ساتھ جاری ہے۔