سعودی عرب کے شمالی علاقے عرعر میں نئے ہوائی اڈے کا افتتاح

عرعرہوائی اڈے سے آزمائشی پروازوں کا آغاز،سالانہ 10 لاکھ افراد سفر کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی سول ایوی ایشن اتھارٹی نےعرعرشہرمیں ایک نئے ہوائی اڈے سے آزمائشی سروسز کا آغازکیا ہے۔ اس ہوائی اڈے سے کل اتوارکے روز قومی سعودی ایئرلائن کی پہلی پرواز دارالحکومت الریاض سے عرعر ہوائی اڈے پر پہلی پرواز پہنچی۔

سعودی عرب کی سرکاری نیوز ایجنسی'ایس پی اے' کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ عرعرہوائی اڈے سے تجرباتی فلائٹ آپریشن کا آغاز کردیا گیا ہے۔ بہ تدریج اس ہوائی اڈے پراندرون ملک پروازوں کا دائرہ وسیع کیا جائے گا۔ جدہ اورالریاض سے عرعر ہوائی اڈے پرسعودی عرب کی قومی ایئرلائن کے طیاروں کی پروازیں چلائی جائیں گی جب کہ دمام سے 'فلائی الناس' کی فلائٹ چلائی جائے گی۔

سول ایوی ایشن کے جنرل اتھارٹی کے سربراہ عبد الہادی المنصوری نے زور دے کرکہا ہے کہ یہ عالمی میکا نزم ہے کہ عالمی سطح پر ہوائی اڈوں کو باقاعدہ پروازوں کے لیے آپریشنل حالت میں لانے سے قبل ان پر آزمائشی پروازیں چلائی جاتی ہیں۔ آزمائشی سروس کا مقصد پروجیکٹ کے انفراسٹرکچر کی صلاحیت کی جانچ کرنا اور اسے زیادہ سے زیادہ مفید اور موزوں بنانے کے قابل بنانا ہے۔ تاکہ باقاعدہ آپریشنل حالت میں لانے سے قبل تمام تکنیکی خامیوں کو دور کیا جاسکے۔

عبدالھادی المنصوری کا کہنا تھا کہ عرعر ہوائی اڈے سے سالانہ 10 لاکھ 39 ہزار ہزار مسافر سفر کرسکیں گے۔ اس ہوائی اڈے پر سالانہ 10 ہزار پروازوں کی گنجائش پیدا کی جائے گی۔ سعودی عرب کے شمالی علاقوں میں مسافروں کی آمد روفت کے لیے یہ ہوائی اڈہ ایک مسافروں کی آمد ورفت کی ایک نئی سہولت ثابت ہوگا۔

نیا ہوائی اڈہ 10 پلیٹ فارم پر مشتمل ہے۔ اس میں مسافروں کی آمدروفت کے لیے چھ گیٹ اور ہوائی جہازوں تک رسائی کے لیے دو پل بنائے گئےہیں۔ اس ہوائی اڈے پر ایک ہی وقت میں چار طیاروں کی آمد روفت کی سہولت ہوگی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں