.

حوثی باغی اپنے مضبوط گڑھ کے اہم علاقے سے پسپا، اہم مقامات پر سرکاری فوج کا کنٹرول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی آئینی فوج نے ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغیوں کو ان کے مضبوط گڑھ صعدہ گورنری میں اہم علاقے سے پسپا کردیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمن کی آئینی حکومت نے گذشتہ روز شمالی گورنری صعدہ میں قطابر ڈاریکٹوریٹ میں آل ثبات کے مقام پر کارروائی کرتے ہوئے باغیوں کو وہاں سےپسپا کردیا اور علاقے کو اپنے کنٹرول میں لے لیا ہے۔

خیال رہے کہ صعدہ گورنری یمن کے حوثی باغیوں کا مضبوط گڑھ سمجھی جاتی ہے۔

یمنی فوج کے شاہین بریگیڈ کے کمانڈر بریگیڈیئر احمد الطریفی نے بتایا کہ آئینی فوج نے آل ثابت میں الربع ٹیلے، آل ثابت مارکیٹ کے بالمقابل وادی جلال اور دیگر اہم مقامات پراپنا کنٹرول مضبوط کرلیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ لڑائی کےدوران بڑی تعداد میں حوثی باغی ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔

بریگیڈیئر الطریفی کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا اور آئینی فوج کے درمیان جاری لڑائی کے دوران مختلف اقسام کے اسلحہ کا استعمال کیا گیا جس کے نتیجے میں پانچ سرکردہ حوثی کمانڈروں اور ابو علی نامی فیلڈ کمانڈر سمیت کئی جنگجو ہلاک ہوگئے۔ زندہ بچ جانے والے باغی اسلحہ چھوڑ کر فرا ہوئے۔ آئینی فوج نے باغیوں سے چھینا گیا اسلحہ اور گولہ بارود قبضے میں لے لیا ہے۔

یمنی فوجی عہدیدار کا کہناتھا کہ آل ثابت اور اطراف میں باغیوں کے خلاف لڑائی کا سلسلہ جاری ہے اور فوج جلد ہی دیگر علاقوں سے بھی حوثی ملیشیا کو نکال باہر کرے گی۔

خیال رہے کہ عرب اتحاد کی معاونت سے یمن کی آئینی فوج صعدہ گورنری میں 8 مختلف محاذوں پر ایرانی حمایت یافتہ جنگجوئوں کے خلاف آپریشن جاری رکھےہوئے ہے۔