.

محمد بن زاید کی جرمن چانسلر کے ساتھ لیبیا کی صورت حال پربات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا میں جاری لڑائی کی روک تھام اور جنگ بندی کے حوالے سے جرمنی کی میزبانی میں بلائی گئی عالمی کانفرنس کے موقعے پر متحدہ عرب امارات کے ولی عہد الشیخ محمد بن زاید آل نھیان سے جرمن چانسلر انجیلا میرکل سے ملاقات کی۔

ملاقات میں لیبیا کی موجودہ صورت حال اور جنگ بندی کی مساعی پربتادلہ خیال کیا گیا۔

ملاقات کے بعد اماراتی ولی عہد نے اپنے ٹویٹر اکائونٹ پر اس ملاقات کی تفصیلات بیان کی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ جرمن چانسلر کے ساتھ ملاقات کے دوران لیبیا کی موجودہ صورت حال پرتفصیل کے ساتھ بات چیت کی گئی۔ اس ملاقات سے اندازہ ہوا کہ انجیلامیرکل لیبیا کے بحران کو جلد از جلد اور پرامن طریقے سے حل کرنے میں گہری دلچسپی رکھتی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں توقع ہے کہ برلن کی میزبانی میں ہونے والی امن مساعی لیبیا میں دیر پامن اور ملک کے استحکام و ترقی کےلیے اہم پیش رفت ثابت ہوگی۔

محمد بن زید نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر لکھا کہ "میں نے برلن میں جرمن چانسلر انجیلا میرکل سے ملاقات کی ... ہم نے اپنی اسٹریٹجک شراکت داری کو مزید گہرائی میں لے جانے، مشرق وسطی کے خطے میں استحکام اور لیبیا میں امن کے قیام کے لیے کوششوں کی حمایت کرنے پر تبادلہ خیال کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ جرمنی میں ہونے والی کانفرنس پورے لیبیا میں سلامتی ، استحکام اور امن کی ضامن ہوگی اور اس کانفرنس سے لیبی قوم کی امنگوں کی ترجمانی کی جاسکے گی۔

اماراتی خبر رساں ایجنسی "ڈبلیو اے ایم" نے بھی ابوظبی کے ولی عہد کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ جرمنی اور اقوام متحدہ کے مندوب کی لیبیا میں فائر بندی کے خاتمے اور بحران کے جامع اور مستحکم سیاسی تصفیہ تک پہنچنے کی کوششوں کے لیے متحدہ عرب امارات کی مکمل حمایت کی جاتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کی کوششوں سے عرب ممالک کی سلامتی ، استحکام اور بحیرہ روم کے خطے میں پائیدار امن کے قیام کی راہ ہموار ہوگی۔

مقبول خبریں اہم خبریں