.

لبنان:نامزد وزیراعظم حسان دیاب کی نئی 20 رکنی کابینہ کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے نامزد وزیراعظم حسان دیاب نے صدرمیشیل عون کی منظوری کے بعد اپنی بیس رکنی کابینہ کا اعلان کردیا ہے۔

قبل ازیں نامزد وزیراعظم کے ذرائع نے العربیہ نیوز کو بتایا ہے کہ نئی کابینہ میں بیس وزراء کی شمولیت کے لیے سیاسی دھڑوں میں ایک سمجھوتا طے پا گیا ہے۔اس کے بعد حسان دیاب نے صدر میشیل عون سے ملاقات کی اور انھیں اپنی کابینہ کے ارکان کی فہرست پیش کی۔

قبل ازیں آج منگل ہی کو لبنان کے نگران وزیر خزانہ علی حسن خلیل نے کہا تھا کہ نئی حکومت کی تشکیل اب چند گھنٹوں کا معاملہ رہ گیا ہے۔

لبنانی صدر میشیل عون نے 19 دسمبر کو سابق وزیرتعلیم حسان دیاب کو وزیراعظم نامزد کرکے نئی حکومت بنانے کی دعوت دی تھی۔ وہ تب سیاسی جماعتوں سے کابینہ کی تشکیل کے لیے مشاورت کررہے تھے جبکہ بیروت سمیت ملک کے مختلف شہروں میں احتجاجی بھی جاری رہے ہیں اور لبنان کی معیشت زبوں حال ہوچکی ہے اور اس کا دیوالا نکلنے کو ہے۔

لبنان کے سابق وزیراعظم سعد الحریری نے اکتوبر میں ملک گیر احتجاجی مظاہروں کے بعد اپنے عہدے سے استعفا دے دیا تھا۔انھوں ںے وسیع تر اقتصادی اصلاحات میں ناکامی کے بعد آیندہ حکومت کا سربراہ بننے سے معذرت کر لی تھی اور وہ وزارتِ عظمیٰ کی امیدواری سے دستبردار ہوگئے تھے۔تب سے وہ ملک کے نگران وزیراعظم چلے آرہے ہیں۔

واضح رہے کہ لبنان میں فرقہ وار بنیاد پر مروج نظام حکومت کے تحت وزیراعظم کا منصب سنی مسلمانوں کے لیے مختص ہے۔ پارلیمان کا اسپیکر شیعہ ہوتا ہے اور صدر مسیحی اقلیت سے تعلق رکھتا ہے۔