یمن: نہم میں حوثیوں کے ڈیتھ بریگیڈ کا سربراہ ہلاک ، بقیہ عناصر نے ہتھیار ڈال دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے دارالحکومت صنعاء کے مشرق میں نہم کے محاذ پر یمنی عسکری ذرائع نے آج منگل کے روز بتایا ہے کہ حوثی ملیشیا کے ایک ذیلی گروپ "كتيبۃ الموت" (ڈیتھ بریگیڈ) نے یمنی فوج کے سامنے ہتھیار ڈال کر خود کو حوالے کر دیا ہے۔ یہ پیش رفت بریگیڈ کے سربراہ کمانڈر جابر المؤيد ، نہم کے محاذ پر بھرتی کے ذمے دار حوثی رہ نما یحیی محمد ناصر اور درجنوں حوثی جنگجوؤں کی ہلاکت کے بعد سامنے آئی۔

ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ نہم کے محاذ پر تین گھنٹے سے زیادہ جاری رہنے والی لڑائی کے دوران ڈیتھ بریگیڈ کو محاصرے میں لے لیا گیا تھا جس پر آخر کار بریگیڈ کے بقیہ ارکان خود کو یمنی فوج کے حوالے کر دینے پر مجبور ہو گئے۔

حوثیوں کی کمر توڑ دینے والے اس کاری وار سے قبل یمنی فوج نے پیر کے روز اعلان کیا تھا کہ اس نے نہم کے محاذ پر حوثیوں کے زیرِ قبضہ پہاڑی سلسلے کو آزاد کرا لیا .. اور باغیوں کے بھاری جانی نقصان اور فرار ہونے کے بیچ یمنی فوج کی پیش قدمی جاری ہے۔

یمنی فوج کے میڈیا سینٹر نے ایک وڈیو کلپ بھی جاری کیا ہے جس میں نہم کے محاذ پر حوثیوں کے خلاف لڑائی کے مناظر موجود ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں