حوثی ملیشیا کا الحدیدہ میں اسپتال اور اقوام متحدہ کے مرکزپر حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے ساحلی شہر الحدیدہ میں 22 مئی اسپتال اور اقوام متحدہ کے سیز فائر مانیٹر پوائنٹ پر گولہ باری کی جس کے نتیجے میں دونوں مراکز کو مادی نقصان پہنچا ہے۔ یہ واقعہ اقوام متحدہ کے ایلچی مارٹن گریفیتھس کے دارالحکومت صنعا چھوڑنے کے چند گھنٹے بعد پیش آیا۔ انہوں نے یمن کے باغی لیڈروں سے جنگ بندی برقرار رکھنے اور عسکری کشیدگی کم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

ایک مقامی ذرائع نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا ہے کہ الحدیدہ میں 22 مئی اسپتال کو گولہ باری سے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں عمارت میں آگ بھڑک اٹھی۔ عینی شاہدین کے مطابق اسپتال پر حوثیوں کی طرف سے تین گولے داغے گئے۔

جمعہ کی شام کو حوثی ملیشیا نے الخامری چوکی پر اس کےقریب سے مکانوں کی چھتوں سے اسنائپروں سے فائرنگ کی گئی۔ الخامری ان پانچ کنٹرول پوائنٹس میں سے ایک ہے جو بین الاقوامی بحالی کی رابطہ کمیٹی نے اسٹاک ہوم معاہدے کے تحت الحدیدہ میں قائم کیے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں