سوڈان کے سینیر صحافی کے قتل میں حزب اللہ ملوث

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سوڈان کے علاقے دارفر میں مقامی شہریوں کے ایک گروپ نے سابق سوڈانی سیکیورٹی سربراہ صلاح قوش کو بتایا ہے کہ سینیر صحافی محمد طہ محمد احمد کو سنہ 2006ء میں حزب اللہ کے عناصر نے قاتلانہ حملے میں ہلاک کردیا تھا۔

ایک شکایت کندہ نے بتایا کہ انہوں نے اپنے وکلاء کی مدد سے سابق سیکیورٹی چیف کو بتایا ہے کہ صحافی محمد طہ محمد احمد کے قتل میں حزب اللہ ملوث ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ محمد طہ کو اس لیے قتل کیا گیا کیونکہ انہوں نے لبنانی حزب اللہ کے ماتحت جنگجوئوں کی فہراست فشاء کرنے کی دھمکی دی تھی۔

خیال رہے کہ سوڈان کی ایک عدالت نے صحافی کے قتل میں ملوث 9 ملزمان کو سزائے موت اور 10 کو بری کردیا تھا۔

محمد طہ حسن الترابی کی قیادت میں قائم اسلامک فرنٹ کے سیاسی شعبے کے سینیر رکن اور جماعت کے ترجمان اخبار'الرایہ' کے چیف ایڈیٹر تھے۔

سنہ 1989ء کے انقلاب کے بعد انہوں نے اسلامک فرنٹ سے اختلافات کے بعد جماعت سے علاحدگی اختیار کرلی تھی اور صدر عمر البشیر کے ساتھ مل گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں