.

غیرعلانیہ امریکی پابندی سے ایرانی نیوز ایجنسی کی سروس معطل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی جانب سے غیر علانیہ پابندی کے نتیجے میں ایرانی پاسداران انقلاب کی مقرب نیوز ایجنسی' فرارو' کو اپنی آن لائن سروس کے تعطل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق بدھ کے روز 'فرارو' نیوز ایجنسی کے صفحہ اول پر ایک مختصر بیان پوسٹ کیا گیا جس میں کہا گیا کہ امریکا کی طرف سے ایجنسی کی سروس پر پابندی کے نتیجے میں نیوز ایجنسی کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ بین الاقوامی سطح پر انٹرنیٹ کی سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں کی طرف سے سائٹ تک رسائی روکے جانے سے 'فرارو' کچھ دیر کے لیے اپنے قارئین کو سروس فراہم نہیں کرسکی جس جس پر وہ قارئین سے معذرت خواہ ہے۔

فرارو نیوز ایجنسی ایران میں بنیاد پرست عناصر کی ترجمان سمجھی جاتی ہے۔

یہ نیوز ایجنسی سرکردہ مذہبی رہ نما عزیز اللہ خشوقت کے بیٹے محمد حسین خشوقت چلا رہے ہیں۔ ان کے آیت اللہ خامنہ ای کے ساتھ قریبی خاندانی تعلقات ہیں۔

امریکا نے کچھ عرصہ پیشتر ایران کی "فارس" نیوز ایجنسی کو وزارت خزانہ کی سفارش پر بلیک لسٹ کردیا تھا۔ اسے بین الاقوامی کمرشل ڈومین 'com' سے نکال دیا گیا تھا جس کے بعد وہ ایک مقامی 'آئی آر' ڈومین پر چلائی جا رہی ہے۔