.

شام : اسرائیلی بم باری میں بشار کی فوج اور پاسداران انقلاب کے 7 ارکان ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں انسانی حقوق کے نگراں گروپ المرصد کے مطابق اسرائیل نے جمعرات اور جمعے کی درمیانی شب دمشق کے ہوائی اڈے کے اطراف بعض ٹھکانوں کو فضائی حملوں کا نشانہ بنایا۔

جمعے کے روز العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں سے ٹیلی فون پر گفتگو میں المرصد کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمن نے بتایا کہ اسرائیلی حملوں میں شامی فوج کے 3 جنگجو اور ایرانی پاسداران انقلاب کے 4 افسران مارے گئے۔

ذرائع کے مطابق یہ حملے ،،، دمشق کے ہوائی اڈے پر ایرانی ہتھیاروں کی کھیپ پہنچنے کے چند گھنٹے بعد کیے گئے۔ غالب گمان ہے کہ اسرائیلی حملوں میں استعمال ہونے والے میزائل مقبوضہ گولان کے علاقے سے داغے گئے۔

ادھر شامی حکومت کے زیر انتظام میڈیا کا کہنا ہے کہ شامی فوج کے فضائی دفاعی نظام نے دارالحکومت کی فضا میں "معاند اہداف" کا راستہ روک لیا۔

سال 2011 میں شامی بحران کے آغاز کے بعد سے اسرائیل نے کئی مرتبہ شامی اراضی پر حملے کیے۔ اس دوران شام میں بشار کی فوج کے علاوہ ایران اور حزب اللہ کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا۔

اسرائیل بارہا یہ باور کرا چکا ہے کہ وہ ایران کی جانب سے شام میں اپنے عسکری وجود کو مضبوط بنانے اور حزب اللہ کو جدید ترین ہتھیار بھیجے جانے کی کوششوں کو روکنے کا سلسلہ جاری رکھے گا۔