.

سعودی طالب علم نے حرم مکی کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھنے کا طریقہ ایجاد کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں ایک طالب علم نے ایسا پروجیکٹ تیار کیا ہے جس کا مقصد حرم مکی کو "کرونا" سمیت ہر قسم کے وائرس سے محفوظ رکھنا ہے۔

سعودی طالب علم عبدالرحمن آل الشیخ کے مطابق ان کے پروجیکٹ کا نام "الحج الآمن" (محفوظ حج) ہے۔ یہ پروجیکٹ حرم مکی اور اس کے زائرین کو ہر قسم کے وائرس اور انفیکشن کی منتقلی سے محفوظ رکھے گا۔

عبدالرحمن نے واضح کیا کہ یہ پروجیکٹ

UVGI برقی مقناطیسی شعاؤں پر مبنی ہے۔ ان شعاؤں کو حرم مکی کی چھت اور فرش پر وائرس کو مارنے کے واسطے استعمال کیا جائے گا۔ یہ استعمال ایک مقررہ درجہ حرارت پر ہو گا جو انسان یا جانور کے لیے نقصان دہ نہیں ہو گا۔

سعودی طالب کے مطابق مذکورہ شعاؤں کو حرم مکی کے نزدیک ایک متعین مقدار میں پھیلایا جائے گا۔ اس طرح کہ وہ حرم کے فرش پر پھیل جائے اور باریک سے باریک جرثوموں اور وائرس کو ختم کردے۔