.

ایران کو غیر معمولی پابندیوں کا سامنا ہے جن سے فرار ناممکن ہے: روحانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی صدر حسن روحانی نے اعتراف کیا ہے کہ ان کے ملک کو عدیم النظیر اقتصادی پابندیوں کا سامنا ہے جن سے فرار ممکن نہیں۔

خیال رہے کہ ایرانی پاسدارا انقلاب کی قیادت امریکا کی طرف سے عاید کردہ اقتصادی پابندیوں پر مختلف نقطہ اور موقف رکھتی ہے۔ پاسداران انقلاب کے مطابق ایران کو امریکا کی طرف سے عاید کی جانے والی پابندیوں سے کوئی فرق نہیں پڑا ہے۔ تاہم ایرانی صدر نے حقیقت کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہےکہ ان کے پر ان پابندیوں سے نکلنے کے لیے کوئی راستہ نہیں‌ بچا ہے۔

حسن روحانی نے مزید کہا کہ اگر امریکا پابندیاں ختم کرے اور جوہری معاہدے کی طرف واپس آئے تو ہم مذاکرات کی میز پر بیٹھ سکتے ہیں۔

صدر روحانی نے کہا کہ یوکرینی طیارے کو مار گرنا ایک عجیب غلطی تھی اور اس کے اعتراف اور اعلان سے ملک کو نقصان پہنچا ہے۔

گذشتہ برس نومبر میں ملک میں ہونے والے مظاہروں کے بارے میں بات کرتے ہوئے روحانی نے اعتراف کیا کہ ان مظاہروں میں ہلاکتیں ہوئیں لیکن ان کا خیال ہے کہ اعداد وشمار کو مبالغہ آمیز قرار دیا گیا ہے۔