.

غزہ سرحد پر جھڑپ کے بعد اسرائیل کے جنوبی علاقے کی جانب راکٹ باری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطینی مزاحمت کاروں نے غزہ کی سرحد پر قابض فوجیوں کے ساتھ جھڑپ کے بعد اسرائیل کے جنوب علاقے کی جانب کم سے کم بیس راکٹ فائر کیے ہیں۔

قبل ازیں اسرائیلی فوجیوں نے غزہ کی سرحد پر ایک فلسطینی کو گولی مار کر شہید کردیا تھا اور اس پر یہ الزام عاید کیا تھا کہ وہ اسرائیل کی سرحدی باڑ کے نزدیک بم نصب کرنے کی کوشش کررہا تھا۔

فوری طور پر کسی فلسطینی گروپ نے اسرائیل پر اتوار کو اس نئے راکٹ حملے کی ذمے داری قبول نہیں کی ہے لیکن بظاہر شہید فلسطینی کے انتقام میں جنوبی اسرائیل کی جانب راکٹ فائر کیے گئے ہیں۔ غزہ ، اسرائیل سرحدی باڑھ پر اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ سے ایک اور فلسطینی زخمی ہوگیا ہے۔

صہیونی فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ جنوبی اسرائیل کے پورے علاقے میں فضائی حملے سے انتباہ کے سائرن بجائے گئے ہیں۔ غزہ کی جانب سے کم سے کم بیس راکٹ چھوڑے گئے ہیں۔ تاہم فوری طور پر ان سے کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔گذشتہ چند ماہ کے دوران میں فلسطینی مزاحمتی تنظیموں کی جانب سے اسرائیل پر یہ سب سے شدید راکٹ باری ہے۔