.

عراقی سکیورٹی فورسزکی مظاہرین پر فائرنگ، ایک شخص ہلاک ، 24 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے دارالحکومت بغداد میں اتوار کو سکیورٹی فورسز نے حکومت مخالف احتجاجی مظاہرین پر ایک مرتبہ پھر فائرنگ کردی ہے جس سے ایک شخص ہلاک اور چوبیس زخمی ہوگئے ہیں۔

عراقی پولیس کے ایک ذریعے نے بتایا ہے کہ ہلاک ہونے والے شخص کو شکاری بندوق سے چلائی گئی گولی لگی تھی اور اسی بندوق کی گولیوں اور اشک آور گیس کے گولے لگنے سے بعض افراد زخمی ہوئے ہیں۔

قبل ازیں عراق کی پارلیمان کا اجلاس کورم پورا نہ ہونے کی وجہ سے ایک مرتبہ پھر ملتوی کردیا گیا اور پارلیمان ایک مرتبہ پھر نامزد وزیراعظم محمد توفیق علاوی کی مجوزہ کابینہ کی منظوری دینے میں ناکام رہی ہے۔

دریں اثناء عراق کی وزارت صحت نے کرونا وائرس کا شکار ہونے والے چھے نئے مریضوں کی تصدیق کی ہے۔اس کے بعد عراق میں اب تک کرونا وائرس کے انیس کیسوں کی تصدیق ہوچکی ہے۔

وزارت صحت نے اپنے بیان میں بتایا ہے کہ نئے مریضوں میں دو کا تعلق دارالحکومت بغداد سے ہے اور چار کا تعلق کرد اکثریتی شہر سلیمانیہ سے ہے۔یہ تمام افراد حال ہی میں ایران سے لوٹے تھے اور وہیں یہ اس مہلک وائرس کا شکار ہوئے تھے۔