.

امریکی کانگریس حوثی باغیوں کو دہشت گرد قرار دے: یمن کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی آئینی حکومت نے امریکی کانگریس سے ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کو دہشت گرد گروپ قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

یمنی وزیر اطلاعات معمر الاریانی نے اپنے سلسلہ وار ٹویٹر پیغامات میں کہا ہے کہ ہم امریکی کانگریس کو خطے میں ایران کے سب سے خطرناک تنظیموں میں سے ایک حوثی ملیشیا کو دہشت گرد تنظیم قرار دلوانے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حوثی ملیشیا لاکھوں یمنیوں کے قتل، اغواء اور انہیں اپنے گھروں سے بیدخل کرنے جیسے سنگین جرائم میں ملوث ہیں۔ حوثیوں نے یمن کے خیر خواہ پڑوسی ممالک کو حملوں کا نشانہ بنانا۔ سمندروں اور خشکی پر بارودی سرنگیں نصب کیں۔ بین الاقوامی مال برادر جہازوں پر حملے کیے اور ایران کے ایماء پر خطے میں انارکی پھیلانے کی مذموم کوشش کی۔

یمنی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ کہ ہم مشرق وسطیٰ میں ایران کے توسیع پسندانہ عزائم کو روکنے، اس کی فرقہ وارانہ ملیشیاؤں کو ختم کرنے اور اس کے دہشت گردی کے خطرات کو کم کرنے میں وائٹ ہاؤس انتظامیہ کے کردار کی مرکزی حیثیت پر زور دیتے ہیں۔

الاریانی نے خطے اور دنیا کے ممالک میں سلامتی اور استحکام برقرار رکھنے کے لیے تہران حکومت پر سیاسی اور معاشی دباؤ کو جاری رکھنے کی اہمیت پر بھی زور دیا۔

یمنی وزیر اطلاعات نے ٹویٹر پیغام کے ساتھ ایک ویڈیو کلپ بھی نشر کیا جو امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو، کانگریس میں امور خارجہ کی کمیٹی میں ہونے والی سماعت کے دوران امریکی کانگرس کے رکن ایڈم ڈینیئل کیسنجر کے تبصرے پر مشتمل ہے۔ اس تبصرے میں عراق، لبنان، یمن اور شام میں ایرانی حمایت یفتہ ملیشیائوں کے منفی کردار کو ختم کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا تھا۔