سُلطنت عمان کے دروازے غیرملکیوں کے لیے بند، نماز جمعہ کے اجتماعات بھی روک دیئے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

خلیجی ریاست سلطنت عمان کرونا وائرس سے بچائو کے لیے متعدد ہنگامی اقدامات کا اعلان کیا ہے۔ سلطنت عمان نے خلیجی ممالک کے باشندوں کے علاوہ دیگر دنیا کے لوگوں کے لیے ملک میں داخلے کے دروازے بند کردیے ہیں۔ حکومت کی طرف سے متعلقہ انتظامیہ کو بتا گیا ہے کہ ملک میں داخلے کے بری، فضائی اور بحری راستوں کی کڑی نگرانی کی جائے اور خلیجی ملکوں کے شہریوں کے سوا کسی کو ملک میں داخل نہ ہونے دیا جائے۔

خلیجی ممالک سے سلطنت عمان آنے والے تمام افراد کا 14 دن کے لیے قرنطینہ میں قیام لازمی ہوگا۔

اس کے علاوہ سلطنت عمان نے عوامی پارکوں کو بند رکھنے ، نماز جمعہ کے اجتماعات کی اور شادی بیاہ جیسے سماجی اجتماعات پربھی عارضی طورپر پابندی عاید کردی ہے۔ نئے فیصلوں کا اطلاق کل 17 مارچ بہ روز منگل ہوگا۔

کل اتوار کے روز سلطنت عمان نے اٹلی کا سفر کرنے والی ایک خاتون کے کرونا وائرس کاشکار ہونے کی تصدیق کی ہے جس کے بعد ملک میں کرونا کے مریضوں کی تعداد 22 ہو گئی ہے۔ ان میں سے 18 افراد ایران کے سفر کی وجہ سے کرونا کا شکار ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں