.

سعودی پراسیکیوشن کا سوشل میڈیا کے غلط استعمال کے مرتکب افراد کی گرفتاری کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوشن نے کرونا وائرس کی آڑ میں سوشل میڈیا پرمذہبی تعلیمات کو غلط رنگ دینے، ریاست اور حاکم وقت کے فرامین کی نافرمانی پراکسانے میں ملوث تین افراد کو حراست میں لینے کا حکم دیا ہے تاکہ ان کے خلاف فوری طورپر قانون کے مطابق سخت کارروائی عمل میں لائی جاسکے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی پبلک پراسیکیوشن نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ سوشل میڈیا ویب سائٹس پر مذہبی تعلیمات کی جعل سازی ، دھوکہ دہی اور حاکم وقت کے احکامات کی نافرمانی پراکسانے والے تین افراد کی نشاندہی کے بعد انہیں حراست میں لے کر عدالت میں پیش کیا جائے۔

اسی سیاق میں گذشتہ منگل کے روز سعودی پراسیکیوشن نے سوشل میڈیا پر مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ایک خاتون کی شناخت کے بعد اسے حراست میں لیا گیا تھا۔ اس خاتون کو ایک ویڈیو شیئر کرنے کے بعد حراست میں لیا گیا جس میں اس نے لوگوں کو کرونا وائرس کے حوالے سے حکومت کی طرف سے دی گئی ہدایات اور کرفیو کی خلاف ورزی پراکسانے کی کوشش کی تھی۔

گرفتار کی گئی خاتون کو فوری طورپر عدالت میں پیش کیا گیا اور اس کے بعد اس کے خلاف سخت قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ کرونا وائرس کے حوالے سے حکومت کی طرف سے دی گئی ہدایات کی خلاف ورزی کرنے والے افراد کے ساتھ بلا امتیاز سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں