.

ملک میں کرونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 5 لاکھ کے قریب ہے: ایرانی ذمے دار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں قومی مرکز برائے انسداد کرونا وائرس کے رکن حامد سوری نے انکشاف کیا ہے کہ ملک میں اس وقت پانچ لاکھ کے قریب افراد اس وبائی مرض سے متاثر ہو چکے ہیں۔ واضح رہے کہ آج منگل کی صبح ایرانی وزیر صحت نے اعلان کیا تھا کہ متعلقہ حکام ابھی تک کرونا وائرس کو کنٹرول کرنے کے مرحلے تک نہیں پہنچے۔ وزیر نے غالب گمان ظاہر کیا کہ وبا کے پھیلاؤ کی صورت حال آئندہ ماہ مئی کے اختتام تک جاری رہے گی۔

حامد سوری نے پیر کی شب ایرانی سرکاری خبر رساں ایجنسی "اِرنا" سے خصوصی گفتگو میں کہا کہ کوویڈ - 19 وائرس کی ہلکی علامات کے حامل مریضوں کے عدم انکشاف کے پیش نظر حکومت کی جانب سے لگائے جانے والے موجودہ اندازے درست نہیں ہیں۔

ایرانی وزارت صحت اپنے تازہ ترین اعداد و شمار میں بتا چکی ہے کہ ملک میں کرونا وائرس کے کیسوں کی تعداد 60 ہزار سے زیادہ ہو گئی ہے۔ ایرانی پارلیمنٹ اس قانونی بل کو مسترد کر چکی ہے جس میں ایک ماہ کے لیے ملکی سرگرمیوں کو معطل کرنے اور کرونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے مکمل قرنطینہ عائد کرنے کے لیے کہا گیا تھا۔

حامد سوری کا مزید کہنا تھا کہ ملک کے 31 میں سے کسی بھی صوبے میں کرونا کے متاثرین کی تعداد نیچے نہیں آئی۔ تاہم ایرانی صدر حسن روحانی اس سے پہلے یہ اعلان کر چکے ہیں کہ ملک کے بعض صوبوں میں وباء کا زور کم ہوا ہے اور لوگوں کے لیے اسکولوں اور کام کی جگہاؤں پر لوٹنا ممکن ہے۔

ایرانی وزارت صحت کے ترجمان کیانوش جانپور نے حالیہ چند دنوں کے دوران دارالحکومت تہران کی سڑکوں پر لوگوں کی بھیڑ اور ٹریفک بڑھنے سے خبردار کیا ہے۔ جہانپور کے مطابق "اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو آئندہ سات سے دس روز میں ہم ایک بار پھر تہران میں وائرس کی شدت دیکھیں گے"۔