.

دبئی: کرونا سے متاثرین کے انکشاف کے لیے "اسمارٹ ہیلمٹ" متعارف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کے انکشاف کے لیے "دبئی کارپوریشن فار ایمبولینس سروسز" نے ایک نئی ٹکنالوجی متعارف کرائی ہے۔ ادارے نے اس مقصد کے لیے اپنے ساز و سامان میں ایک اسمارٹ ہیلمٹ کا اضافہ کیا ہے۔ اس کے ذریعے طبی معاونین اپنے اطراف موجود افراد پر صرف نظر ڈالنے سے اُن کے جسمانی درجہ حرارت کی جانچ کر سکیں گے۔

دبئی کارپوریشن فار ایمبولینس سروسز کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر خلفیہ الدرائی نے "الامارات اليوم" اخبار کو بتایا کہ حال ہی میں ادارے کی جانب سے متعارف کرایا جانے والا اسمارٹ ہیلمٹ فی الوقت تجرباتی طور پر استعمال کیا جا رہا ہے۔ ادارہ ہنگامی خدمات سے متعلق دنیا کا جدید ترین ساز و سامان اور لوازمات فراہم کرنے کی کوششوں میں مصروف ہے۔

مذکورہ ہیلمٹ کے کام کرنے کے طریقہ کار میں مصنوعی ذہانت کی ٹکنالوجی پر انحصار کیا گیا ہے۔ طبی معاون اہل کار کی جانب سے ہیلمٹ کی الکٹرونک سیٹنگ کی جاتی ہے۔ ہیلمٹ کو موبائل فون پر اسمارٹ پروگرام کے ساتھ مربوط کر دیا جاتا ہے۔ اس طرح طبی اہل کار ہیلمٹ کا استعمال کرتے ہوئے محض کسی بھی شخص پر نظر ڈال کر اس کے جسم کا درجہ حرارت معلوم کر سکتا ہے ... اور اس شخص کے کرونا وائرس (کوویڈ 19) سے متاثر ہونے کے امکان کا جان کر مطلوبہ اقدامات عمل میں لائے جا سکتے ہیں۔

اس اسمارٹ ہیلمٹ کو عمارتوں کے اندر اور باہر استعمال کیا جائے گا۔