.

قاہرہ : مصری فورسز کی گنجان آباد علاقے میں دہشت گردوں سے جھڑپ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے دارالحکومت قاہرہ کے گنجان آباد علاقے الامیریہ میں سکیورٹی فورسز کی دہشت گردوں کے ایک گروپ کے ساتھ جھڑپ ہوئی ہے۔

مصر میں العربیہ کے بیورو چیف رندہ ابوالعزم نے سکیورٹی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ’’ دہشت گرد الامیریہ میں واقع اپنے ایک خفیہ ٹھکانے میں بم تیار کررہے تھے اور بم حملوں کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔‘‘

انھوں نے اطلاع دی ہے کہ انسداد دہشت گردی فورس نے پولیس اور وزارت داخلہ کے تحت دیگر سکیورٹی فورسز کے اہلکاروں کے ساتھ مل کر ان دہشت گردوں کے خفیہ ٹھکانے پر منگل کی شب چھاپا مار کارروائی کی ہے۔

العربیہ کے ذرائع نے بتایا ہے کہ دہشت گردوں کا یہ گروپ مصری سکیورٹی فورسز اور قبطی عیسائیوں پر بم حملوں کی منصوبہ بندی کررہا تھا اور اسی مقصد کے لیے بم تیار کررہا تھا۔

مصر کے مقامی میڈیا نے سکیورٹی فورسز کی اس کارروائی کی بعض ویڈیوز سوشل میڈیا پر پوسٹ کی ہیں۔ان کے مطابق سکیورٹی فورسز نے الامیریہ میں واقع ایک عمارت کا محاصرہ کررکھا ہے اور وہاں سے فائرنگ کی آوازیں سنائی دے رہی ہیں۔

مصر عرب دنیا کا سب سے گنجان آباد ملک ہے۔اس نے حالیہ ہفتوں کے دوران میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کرفیو نافذ کررکھا ہے۔اس کے تحت بڑے عوامی اجتماعات پر پابندی عاید ہے۔اسکول ، کالج اور جامعات بند ہیں۔

مصر کی وزارت صحت نے اتوار تک کرونا وائرس کے 2065 کیسوں کی تصدیق کی تھی۔ان میں 159 جان کی بازی ہار چکے تھے۔