.

فوجیوں کے سرقلم کرنے کی دھمکی کے بعد النصرہ کی ترکی سے معذرت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں القاعدہ کی سابقہ تنظیم 'النصرہ فرنٹ' (لبریشن موومنٹ برائے شام) کی طرف سے حال ہی میں سوشل میڈیا یر ایک ویڈیو جاری کی گئی تھی جس میں تنظیم کے بعض جنگجوئوں کو ادلب میں ترک فوجیوں کا مذاق اڑانے اور ان کے سر قلم کرنے کی دھمکی دیتے دکھایا گیا تھا۔

اس ویڈیو کے سامنے آنے کے بعد اس گروپ نے ترکی میں ایک مختصر بیان جاری کیا ہے جس میں اس نے ترکی سے معذرت کی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ تحریر شام محاذ اور ترک فوج شام میں ایک ہی مقصد کے لیے جنگ لڑ رہی ہیں۔

بیان میں ترکی سے کہا گیا ہے کہ ادلب میں ترک فوجیوں کے خلاف ہتک آمیز بیان ریکارڈ کرانے اور ان کے سر قلم کرنے کی دھمکیاں دینے والے عناصر کا کڑا احتساب کیا جائے گا۔

سابقہ النصرہ فرنٹ کا مزید کہنا ہے کہ ترک فوج بشارالاسد اور اس کے اتحادیوں کے خلاف جاری ہماری انقلاب جدو جہد میں ہمارا دست وبازو ہے۔ ترک فوجیوں نے شام کے کئی علاقوں کی آزادی میں اپنا خون اور جانوں کے نذرانے پیش کیے ہیں۔

خیال رہے کہ ویڈیو میں النصرہ کے بعض جنگجوئوں کی طرف سے ادلب کچھ علاقوں سے ترک فوج کی واپسی کامذاق اڑاتے ہوئے کہا گیا تھا کہ ترک فوجیوں نے مزید کوئی ایسی حماقت کی تو ترکی کو اپنے فوجیوں کی لاشیں ملیں گی۔