.

سعودی عرب کی وزارت مذہبی امور کی طرف سے انڈونیشیا میں 88 ٹن خوراک کی تقسیم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت مذہبی امور کی جانب سے برادرملک انڈونیشیا میں سنہ 1441ھ کے ماہ صیام کے موقعے پر روزہ داروں کی افطاری اور مستحق افراد میں 88 ٹن خوراک تقسیم کی گئی جس سے ایک لاکھ 80 ہزار افراد نے استفادہ کیا۔

العربیہ ڈاٹ‌نیٹ کے مطابق انڈونیشیا میں خوراک کی تقسیم کا عمل وہاں پر خادم الحرمین الشریفین کے سفیر عصام عابد الثقفی کی نگرانی میں کیا گیا۔

خیال رہے کہ رواں سال ماہ صیام کے موقعے پر سعودی عرب کی طرف سے 18 ممالک میں روزہ داروں کی افطاری کے پروگرام کے تحت امداد کی تقسیم کا اعلان کیا گیا تھا۔

اس موقعے پر سعودی عرب کے سفیر عصام الثقفی نے خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز کی ماہ صیام کے موقعے پر عالم اسلام کی بہبود اور مدد کی مساعی کو خراج تحسین پیش کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ انڈونیشیا میں روزہ داروں کے لیے امدادی سامان کی تقسیم کا عمل مقامی قیادت کی رہ نمائی اور ہدایت کے مطابق عمل میں لایا گیا۔

انہوں‌نے سعودی عرب کے وزیر برائے مذہبی امور ڈاکٹر عبداللطیف آل الشیخ کی طرف سے کرونا کی وبا میں انڈونیشیا میں روزہ داروں کے لیے امداد کی فراہمی پران کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔

اس موقعے پر جکارتا میں سعودی عرب کے مذہبی اتاشری الشیخ احمد الحازمی نے کہا کہ انڈونیشیا کے جزیرہ نما علاقوں، غربت کا قصبوں اور محتاج خاندانون میں امداد کی تقسیم سعودی عرب کی انسان دوستی کا ثبوت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ انڈونیشیا میں خوراک کے 4 ہزار پیکٹ تقسیم کئے گئے۔ ایک پیکٹ میں خشک خوراک کی 12 اقسام شامل تھیں‌اور مجموعی طور پر 88 ٹن خوراک تقسیم کی گئی۔