.

امارات : وزارتوں اور سرکاری اداروں میں 30% کام کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں تمام سرکاری وزارتوں اور وفاقی اداروں نے آج اتوار کے روز سے 30% کام شروع کر دیا ہے۔

یہ فیصلہ حکومتی کام کے جاری رہنے ، ملازمین کی بتدریج واپسی اور حکومتی خدمات پیش کیے جانے کے عمل کو مضبوط بنانے کے سلسلے میں سامنے آیا ہے۔ مزید برآں یہ فیصلہ گھر سے کام کرنے والے اُن افراد کے نظام کے متوازی ہے جن کو اس فیصلے سے مستثنی قرار دیا گیا۔

فیصلے کے تحت کئی طبقات کو دفتر آنے سے استثنا دیا گیا ہے۔ ان میں حاملہ خواتین، پریشانی کا شکار افراد، دیرینہ امراض میں مبتلا افراد اور کمزور مدافعت کے حامل افراد اور عمر رسیدہ ملازمین شامل ہیں۔

استثنائی حالتوں میں وہ خواتین ملازمین بھی شامل ہیں جن کے گود کی عمر کے بچے ہیں یا کسی ہنگامی صورت حال کی بنا پر انہیں بچوں کا خیال رکھنے کے واسطے گھر میں رہنا لازم ہے۔

سرکاری وزارتوں اور دفاتر میں 30% کے ادنی ترین تناسب سے حاضری کا آغاز کیا گیا ہے۔ حالات اور صورت حال کی پیش رفت کی بنیاد پر اس میں بتدریج اضافہ کیا جائے گا۔ اس دوران افراد اور معاشرے کی صحت و سلامتی کے واسطے تمام تر احتیاطی اقدامات اور تدابیر لاگو رہیں گی۔