.

ٹریفک حادثہ یا ایرانی پولیس کی فائرنگ، تہران میں تین افغان پناہ گزین جل کر جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں ذرائع ابلاغ نے خبر دی ہے کہ افغان پناہ گزینوں کی ایک گاڑی میں بھڑکنے والے آگ کے نتیجے میں کم سےکم تین مہاجرین ہلاک ہوگئے ہیں۔ اس حوالے سے متضاد اطلاعات سامنے آئی ہیں۔ تہران میں قائم افغان سفارت خانے کےمطابق ایک المناک ٹریفک حادثے میں کم سے کم تین افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ حادثے میں مہاجرین کی گاڑی میں آگ بھڑک اٹھی جس کے نتیجے میں گاڑی اور اس میں موجود افراد جل کر خاکستر ہوگئے۔ دوسری طرف عینی شاہدین نے بتایا ہےکہ افغان مہاجرین کی گاڑی کو حادثہ پیش نہیں آیا بلکہ ایرانی پولیس نے گاڑی پر فائرنگ کی جس کےنتیجے میں گاڑی میں آگ لگ گئی اور اس میں سوار متعدد افراد ہلاک ہوگئے۔

ایران میں پیش آنے والے اس واقعے کی ایک ویڈیوفوٹیج بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ہے جس میں ایک گاڑی کو آگ کی لپیٹ میں دیکھا جاسکتا ہے جب کہ اس کے اندر جل ہویی سواریاں بھی دیکھی جاسکتی ہیں۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ ایرانی پولیس کی فائرنگ کا نتیجہ ہے۔

ایران میں انسانی حقوق کے ایک صارف نے ٹویٹر اکائونٹ پر لکھا کہ افغان مہاجرین کی گاڑی کو حاثہ ایرانی پولیس کی فائرنگ کے نتیجے میں پیش آیا۔ گاڑی میں 16 افغان مہاجرین سوار تھے۔