.

الجزائر کی لیبیا کے متحارب فریقین میں مصالحت کرانے کی پیشکش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الجزائر کے صدر عبدالمجید تبون نے ہفتے کے روز لیبیا کی پارلیمنٹ کے اسپیکر عقیلہ صالح سے ملاقات میں لیبیا کے متحارب فریقین کے درمیان مصالحت کی پیش کش کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عقیلہ صالح سے ملاقات کے موقعے پر الجزائری صدر نے کہا کہ ان کا ملک برادر ملک لیبیا کے استحکام، ترقی، خوشحالی اور خود مختاری کا حامی ہے۔ لیبیا میں جاری لڑائی میں شامل دونوں فریقوں کو مذاکرات کی میز پرآنا ہوگا۔ الجزائر دونوں فریقوں کےدرمیان مصالحت اور بات چیت کرانے کے لیے ہرممکن تعاون کے لیے تیار ہے۔

الجزائری صدر نے لیبیا میں جاری لڑائی میں غیرملکی مداخلت کو مسترد کردیا اور لیبیا میں جنگ بندی کے حوالے سے مصر اور دوسرے ممالک کی کوششوں کو سراہا۔ اس موقعے پر لیبی پارلیمںٹ کے اسپیکر عقیلہ صالح نے صدر عبدالمجید تبون کی جانب سے لیبیا میں جنگ بندی اور فریقین میں مصالحت کرانے کے وعدے کو سراہا۔

عقیلہ صالح نے ملاقات میں لیبیا میں ترکی کی فوجی مداخلت کا معاملہ بھی اٹھایا اور کہا کہ ترکی کی عسکری مداخلت کے نتیجے میں لیبیا میں خون خرابہ بڑھ گیا ہے۔