.

"حوثی باغیوں کا کسی ایک ملک پرحملہ تمام خلیجی ممالک پرحملے کے مترادف ہے"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) نے یمن کے ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغیوں کےسعودی عرب کی سول آبادی پر راکٹوں اور ڈرون طیاروں کے ذریعے کیے گئےحملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردارکیا ہے کہ کونسل کےکسی ایک رکن پرحملہ تمام خلیجی ممالک پرحملہ سمجھا جائے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق خلیج تعاون کونسل کی طرف سے گذشتہ روز جاری ایک بیان میں کہا گیا ہےکہ حوثی باغیوں کی طرف سے سعودی عرب پر ڈرون طیاروں کی مدد سے حملے کی کوشش قابل مذمت ہے۔ کونسل اس حملے میں سعودی عرب کے ساتھ کھڑی ہے۔

خلیج تعاون کونسل کی ویب سائٹ نے بتایا ہے کہ کونسل کے سکریٹری جنرل سعودی عرب کے جنوبی علاقے خمیس مشیط پر حوثیوں کی طرف سے شہری آبادی پرحملہ کھلی دہشت گردی ہے۔ سعودی عرب کو اپنے دفاع اور بیرونی حملوں کی روک تھام کا حق حاصل ہے۔ اس حوالے سے کونسل سعودی عرب کےساتھ کھڑی ہے۔

خیال رہے کہ سوموار کے روز عرب اتحادی فوج نے یمن سے سعودی عرب کے علاقے عسیر اور خمیس مشیط پر چھوڑے گئے ڈرون طیاروں کو مار گرایا تھا۔

خلیج تعاون کونسل نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنی ذمہ داریوں کو نبھائیں اور خطے میں امن و سلامتی کو غیر مستحکم کرنے کی سازشوں کے خلاف خلیجی ممالک کا ساتھ دے۔