.

عسیر میں سیاحتی موسم کا آغاز، شہر عالمی سیاحوں کے استقبال کے لیے تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے جنوب مغربی علاقے عسیر میں موسم گرما کے سیاحت سیزن کا آغاز ہونے جا رہا ہے۔ تاہم اس بار کرونا وبا کی وجہ سے انتظامیہ اور سیاحوں کی جانب سے احتیاطی تدابیر پرعمل درآمد کرنا ضروری ہوگا۔ مقامی انتظامیہ نے عسیر میں سیاحت کے فروغ کے ساتھ ساتھ کرونا سے بچائو کے لیے سخت حفاظتی انتظامات کا بھی اعلان کیا ہے۔

عسیر کے سیاحتی موسم کے آغاز کےساتھ ہی "دنیا کو خوش آمدید" کے عنوان سے ایک پروگرام شروع کیا گیا ہے۔ اس پروگرام کے تحت جدید ٹیکنالوجیز کا استعمال ، سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کے ذریعے عسیر کے سیاحتی مقامات کو سیاحوں کے سامنے پیش کیا جا رہا ہے تاکہ سعودی شہری، مملکت میں مقیم دوسرے ممالک کے تارکین وطن، عرب زائرین، خلیجی ممالک اور پوری دنیا کے سیاحوں کی توجہ اس طرف مبذول کرائی جا سکے۔

دنیا خوش آمدید پروگرام کے ایک عہدیدارزکی العریفی نےالعربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ "أهلاً بالعالم" پروگرام سے قبل سعودی شہریوں کے لیے "أهلا بالعالم في السعودية" پروگرام شروع کیا گیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ عیسر کے باشندوں کی حیثیت سے اس کے سیاحتی مقامات کی ترویج اور سیاحوں کو ان کے بارے میں اگاہ کرنا ہماری ذمہ داری ہے۔

انہوں نے کہا کہ عسیر کی سیاحتی ترقیاتی کونسل کے چیئرمین اور عسیر کے گورنر شہزادہ ترکی بن طلال کی ہدایت پر اھلا بالعالم پروگرام شروع کیا ہے۔

العریفی نے بتایا کہ عسیر میں 450 تاریخی مقامات جب کہ 45 عجائب گھر ہیں۔ عسیر گورنری میں مجموعی طور پر 4275 سیاحتی قصبے ہیں۔ ان میں ابھا میں542،بارق میں 220،المجاردہ میں 397، محائل میں 715، البرک میں 406، المع میں 237، سراۃ عبیدہ میں 182، بلقرن میں 216، انماص میں 262،تثلیث میں 127، جنوبی ظہران میں 73، الحرجہ میں 246 مقامات ہیں۔