.

غزہ : حماس کے مفرور کمانڈر نے اسرائیل کو تنظیم کی قیادت کے بارے میں تفصیلات منتقل کیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

العربیہ کو خصوصی ذرائع کے حوالے سے اسرائیل فرار ہونے والے حماس تنظیم کے کمانڈر کے بارے میں نئی تفصیلات معلوم ہوئی ہیں۔ اس بات کا بھی انکشاف ہوا ہے کہ مذکورہ کمانڈر نے حماس کی قیادت کی نقل و حرکت، تنظیم کے راکٹوں کے ڈپوؤں، اس کے ارکان کی تربیت کے مقامات اور سیاسی و عسکری قیادت کی سکونت کی جگہاؤں کے متعلق معلومات اِفشا کی ہیں۔

ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ حماس تنظیم نے اپنے ایک کمانڈر کے اسرائیل فرار ہو جانے کے بعد تنظیم کے متعدد سیکورٹی ذمے داران کو برطرف کر دیا ہے۔ علاوہ ازیں متعدد سیاسی رہ نماؤں اور مسلح ونگ کے کمانڈروں نے اپنے قیام کے مقامات تبدیل کر لیے ہیں۔

ذرائع نے واضح کیا کہ حماس کے سیاسی بیورو کے سربراہ اسماعیل ہنیہ نے مطالبہ کیا ہے کہ انہیں اس حوالے سے تحقیقات کے بعد جلد از جلد تمام امور سے آگاہ کیا جائے۔

اسی طرح العربیہ کے ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد کے عناصر نے حماس تنظیم کے ایک کمانڈر کو فرار کروایا۔ اس کارروائی کے لیے 72 گھنٹے پہلے سے تیاری کی گئی تھی۔

فرار ہونے والے کمانڈر کی شناخت کی ابھی تک تصدیق نہیں ہو سکی تاہم فلسطینی ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈز کے ایک یونٹ کا سربراہ تھا۔ مذکورہ کمانڈر کے فرار ہونے کے بعد حماس تنظٰم نے اپنے متعدد ارکان کو اسرائیل کے لیے مخبری کے الزام میں گرفتار کر لیا۔ کہا جا رہا ہے کہ کہ گرفتار ہونے والوں میں غزہ کے علاقے الشجاعیہ میں القسام بریگیڈز کا کمانڈر اور اس کا بھائی بھی شامل ہے۔

غزہ پٹی سے موصول ہونے والی میڈیا رپورٹوں کے مطابق حماس تنظیم کی داخلہ سیکورٹی کی حراست میں موجود محمد عمر ابو عجوہ الشجاعیہ کے علاقے میں القسام بریگیڈز کے برقی رابطوں کے نظام کا اولین ذمے دار تھا۔ اس پر اسرائیل کے لیے مخبری کا الزام ہے۔ رپورٹوں میں غالب گمان ظاہر کیا گیا ہے کہ ابو عجوہ نے ممکنہ طور پر اسرائیل کے لیے القسام بریگیڈز کے کمیونی کیشن نیٹ ورک اور غزہ پٹی میں حماس تنظیم کی سیکورٹی کے بارے میں تزویراتی معلومات اِفشا کیں۔

ابو عجوہ غزہ شہر کے مشرقی علاقے الشجاعیہ کا رہنے والا ہے۔ وہ کمپیوٹر انجینئر اور الشجاعیہ میں مسجد الاصلاح کا امیر بھی ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق ابو عجوہ کا اسرائیلی انٹیلی جنس کے ساتھ رابطہ 2009 میں شروع ہوا۔ اس نے القسام بریگیڈز میں اپنے اہم عہدے کا فائدہ اٹھایا۔ ابو عجوہ معلومات جمع کرنے، ذاتی سیکورٹی اور جاسوسی کے انسداد کے حوالے سے تربیتی کورسز کی نگرانی کرتا تھا۔ غزہ پٹی میں حماس کے ذمے داران کو جب یہ معلوم ہوا کہ اسرائیل تنظیم کے داخلی نظام کے بارے میں سب کچھ جانتا ہے تو انہوں نے کئی سالوں کی محنت سے قائم کیے گئے اس نظام کی ہر چیز کو تبدیل کر ڈالا۔