مسجد حرام : حج سیزن کے دوران بابِ ملک عبدالعزیز کے افتتاح کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مکہ مکرمہ میں مسجد حرام کے سب سے بڑے دروازے "باب ملک عبدالعزیز" کو رواں سال حج سیزن کے دوران کھول دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ حرم شریف میں جاری ترقیاتی منصوبوں کے پیکج میں شامل ایک اہم منصوبہ ہے۔

مذکورہ فیصلہ مسجد حرام اور مسجد نبوی کے امور کے سربراہِ عام شیخ عبدالرحمن السدیس کی جانب سے باب عبدالعزیز کے کام کا جائزہ لینے کے موقع پر سامنے آیا۔ اس موقع پر شیخ السدیس نے منصوبے کے انجینئروں اور تمام کارکنوں کی محنت کو سراہا۔

شیخ السدیس نے واضح کیا کہ حرمین شریفین کے امور کی جنرل پریذیڈنسی کرونا کے پھیلاؤ کو روکنے اور حجاج بیت اللہ کی سلامتی کو یقینی بنانے کے لیے تمام تر احتیاطی اقدامات اور حفاظتی تدابیر عمل میں لا رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ "ہم حجاج کرام کے آرام ، سکون اور راحت کو یقینی بنانے کے شدید خواہاں ہیں تا کہ وہ مکمل اطمینان اور سہولت کے ساتھ اپنے مناسک ادا کر سکیں۔ جنرل پریذیڈنسی کی خواہش ہے کہ وہ اللہ کے مہمانوں کی بہترین خدمت کے حوالے سے مملکت کی دانش مند قیادت کی امیدوں اور توقعات پر پورا اترے"۔

یاد رہے کہ باب ملک عبدالعزیز کے اندرونی اور بیرونی جانب استعمال ہونے والے سنگ مرمر کا حجم 3000 مربع میٹر سے زیادہ ہے۔ میناروں کی تکمیل پر اس کی مجموعی بلندی 137 میٹر ہو گی۔ باب ملک عبدالعزیز کی بلندی 51 میٹر اور اس کی چوڑائی 39 میٹر ہے۔ دروازے میں داخلے کے لیے تین کمانی محرابیں بھی ہیں جن میں ہر ایک کی بلندی 20 میٹر اور چوڑائی 5 میٹر ہے۔

دروازے کے کام کے حتمی مراحل کی تکمیل کے لیے 500 کارکنان مصروف ہیں

مقبول خبریں اہم خبریں