.

اسرائیلی وزیر دفاع کی کسی بھی خطرے کا پوری قوت سے جواب دینے کی دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیر دفاع بینی گانٹز نے اتوار کے روز کہا ہے کہ تل ابیب اپنے سیکیورٹی مفادات کو ہرصورت میں حاصل کرے گا۔ اسرائیل کی سلامتی کو لاحق خطرات کا پوری قوت کے ساتھ مقابلہ کیا جائے گا۔

انہوں‌ نے ان خیالات کا اظہار لبنان کی سرحد کے قریبی علاقوں کے دورے کے دوران فوجیوں سے ملاقات کے دوران کیا۔

لبنان میں العربیہ کے نامہ نگار کے مطابق گذشتہ روز اسرائیل کا ایک ڈرون طیارہ جنوبی لبنان میں گر کر تباہ ہو گیا تھا۔

اسرائیلی وزیر نے اعلان کیا کہ تل ابیب کسی بھی دھمکی کا سخت ردعمل ظاہر کرے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم کسی سے کشیدگی نہیں چاہتے مگر ہم اپنے ملک کے دفاع سے غافل بھی نہیں ہیں۔

قبل ازیں اسرائیلی فوج نے شام میں فضائی حملے کیے جس کے نتیجے میں حزب اللہ اور ایرانی ملیشیا کے دو اہم کمانڈر ہلاک ہو گئے۔ اسرائیلی فوج نے ہفتے کی رات حزب اللہ ملیشیا کی نقل و حرکت کے بعد شام میں سرحدی مقامات پر بمباری کی تھی۔

اور ہفتے کے روزبینی گانٹز نے زور دے کر کہا تھا کہ لبنان اور شام اپنے علاقوں میں اسرائیل کے خلاف کسی بھی کارروائی کے ذمہ دار ہوں‌ گے۔

وزیر دفاع نے عبرانی چینل 13 کے ایک انٹرویو میں شام اور لبنان کی طرف سے درپیش شمالی سرحدوں پر ہونے والی سرگرمیوں کے جواب میں دونوں ممالک کو سخت اور جارحانہ کارروائی کی وارننگ دی تھی۔

گانٹز نے ہفتہ کے روز چیف آف اسٹاف اور مسلح افواج کے سربراہ کے ساتھ صورت حال کا اندازہ لگانے کے ایک میٹینگ میں شرکت کی۔ ملاقات کے بعد انہوں نے کہا کہ تل ابیب اپنی خودمختاری اور عوامی تحفظ کے لیے کسی بھی خطرے کو برداشت نہیں کرے گا۔