خالد بن سلمان کا یمن میں مفاہمت کے لیے طے کردہ معاہدہ ریاض پرجلد عمل درآمد پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے یمن کی آئینی حکومت اور عدن کی عبوری کونسل کے درمیان الریاض کی میزبانی میں طے پائے مفاہمتی میکانزم پر جلد از جلد عمل درآمد پر زو ردیا ہے۔

العربیہہ ڈاٹ نیٹ‌ کے مطابق سعودی نائب وزیر دفاع نے ان خیالات کا اظہار کل جمعرات کو یمنی پارلیمنٹ کے اسپیکر سلطان البرکانی، یمنی صدر کے مشیروں اور ریاستی کونسل کے ارکان پر مشتمل ایک وفد سے ملاقات میں کیا۔

Advertisement

سعودی پریس ایجنسی 'ایس پی اے' کے مطابق یمنی عہدیداروں نے یمن میں جاری خانہ جنگی کی روک تھام کے لیے سعودی عرب کی کوشوں کو سراہا۔ انہوں‌ نے کہا کہ سعودی عرب کی قیادت نے یمنی عوام کی بہتری کے لیے ناقابل فراموش خدمات انجام دی ہیں۔ انہی میں یمنی حکومت اور عدن کی عبوری کونسل کے درمیان سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کی مساعی سے الریاض مفاہمتی میکانزم بھی شامل ہے۔

اس موقعے پر سعودی نائب وزیر دفاع نے یمنی رہ نمائوں کو یقین دلایا کہ سعودی عرب یمن میں دیر پر امن ومان کے قیام اور خوشحالی کے لیے اپنی ذمہ داریاں انجام دیتا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ یمن کے صدر عبد ربہ منصور ہادی، ان کی حکومت اور عدن کی انقلابی کونسل کے درمیان مفاہمت سے یمن میں امن کی بحالی اور یمن دشمن قوتوں کی سرکوبی میں مدد ملے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں