.

ایران سے دھماکہ خیز مواد بحرین اسمگل کرنے کی سازش ناکام بنا دی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خلیجی ریاست بحرین کی وزارت داخلہ نے جمعرات کی شام ٹویٹر پر اپنے ٹوئٹس میں اعلان کیا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ایران سے آنے والی دھماکہ خیز مواد سے لدی دو کاروں کو ضبط کر کے ایران سے دہشت گردی کی کوشش ناکام بنا دی۔

بحرین میں دھماکہ خیز مواد منتقل کرنے والے اسمگلروں سے تفتیش جاری ہے۔ وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ گرفتار افراد نے تفتیش کے دوران انکشاف کیا کہ دھماکہ خیز مواد بحرین منتقل کرنے کے پیچھے لبنانی دہشت گرد حزب اللہ ملیشیا کا ہاتھ ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ لبنانی حزب اللہ نے فروری 2011 میں بحرین کی سیکیورٹی کو نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی تاہم مناما میں حکام نے بحرینی ساحل سے گولہ بارود ، دھماکہ خیز مواد اور اسلحے کی کھیپ کی اسمگلنگ کو ناکام بنا کر ایرانی سازش ناکام بنا دی تھی۔

انقلابی گارڈز کے سابق کمانڈر محمد علی جعفری نے چار سال قبل لبنان سمیت علاقائی ممالک میں دو لاکھ عسکریت پسندوں کی بھرتی کا اعتراف کیا تھا جس میں اس کے ملک کی خطے کو غیر مستحکم کرنے کی کوشش کی واضح تصدیق کی گئی تھی۔