اسکیٹنگ کے کھیل کی دیوانی 13 سالہ سعودی لڑکی سے ملیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے صوبے قصیم کے شہر عنیزہ میں پیدا ہونے والی 13 سالہ سعودی لڑکی ملک الشائع اس وقت امریکا میں مقیم ہے۔ وہ اسکیٹنگ کے کھیل کی دیوانی ہے۔ اس نے باقاعدہ تربیت حاصل کرنے کے بعد اولمپک راؤنڈز میں شرکت کی۔ اس طرح ملک ونٹر گیمز میں میڈل حاصل کرنے والی پہلی سعودی بن گئی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے ملک نے اپنی کہانی یوں بیان کی "امریکا میں میری ایک دوست نے اپنی سال گرہ کی تقریب میں شرکت کی دعوت دی۔ یہ تقریب ہمارے شہر میں واقع اسکیٹنگ ہال میں منعقد ہوئی۔ اس دن سے میرا دل اس کھیل میں اٹک گیا اور میں مستقل طور پر اسکیٹنگ کے لیے جانے لگی"۔

ملک نے مزید بتایا کہ "میری والدہ کے علم میں آیا کہ مذکورہ ہال میں اسکیٹنگ سے متعلق اسباق دیے جاتے ہیں۔ میں نے تمام چھ بنیادی لیولز میں اپنا اندراج کرا لیا۔ اس کے بعد میں تمہیدی لیول میں منتقل ہو گئی جو Pre-Free Skate کے نام سے جانا جاتا ہے۔ بعد ازاں Free skate کے چھ لیولز تک پہنچ گئی۔ میں نے 2 دسمبر 2019 کو ان تمام لیولز کو پایہ تکمیل تک پہنچایا۔ اس کے بعد میں Axel Jump کے خصوصی لیول میں گئی۔ یہ اسکیٹنگ میں مشکل ترین چھلانگوں میں شمار ہوتی ہے۔ میں نے ریکارڈ مدت میں اس میں مہارت حاصل کر لی۔ اس کے بعد میں اگلی سطح jump and spin میں چلی گئی"۔

ملک الشائع نے Arena Spirit Ice میں ہونے والی Figure Skating Exhibition میں شرکت کی۔ اس کا انعقاد 10 مئی 2019ء کو ہوا تھا۔ مزید برآں ملک نے 6 مارچ 2020ء کو ہونے والے مقابلے Houston Invitational 2020 میں بھی شرکت کی۔ یہاں اس نے چوتھی پوزیشن حاصل کی تھی۔

ملک الشائع کا کہنا ہے کہ "میں اس وقت امریکا میں مقیم ہوں اور اپنی خصوصی خاتون تربیت کار Kimberly Williams کے زیرِ نگرانی Spirit Ice Arena ہال میں اسکیٹنگ کرتی ہوں۔ میرا تعلق Brazos Valley Figure Skating Club سے ہے۔ میں اس وقت ان تمام ٹیسٹوں کی تیاری میں مصروف ہوں جو مجھے اولمپک کھیلوں میں شرکت کا اہل بنا دیں"۔

ملک الشائع کی والدہ کہتی ہیں کہ "میری بیٹی ملک نے دو سال قبل اس کھیل کی تربیت حاصل کرنا شروع کی۔ یہ عمر اسکیٹنگ سیکھنے کے حوالے سے زیادہ شمار ہوتی ہے۔ لہذا وہ عمر میں خود سے چھوٹے بچوں کے ساتھ اسباق لینے پر مجبور ہوئی۔ تاہم اپنے عزم اور یقین کے ساتھ وہ جلد ہی اپنی ساتھیوں کے لیول تک پہنچ گئی۔ اس کھیل میں لچک دار اور مضبوط جسم کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس کے لیے طویل تربیتی دورانیہ درکار ہوتا ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں