.

لبنان میں 'العربیہ' کا فوٹو گرافر مظاہروں کی براہ راست کوریج کے دوران زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں کل ہفتے کے روز ہونے والے حکومت مخالف مظاہروں کی کوریج کرنے والا 'العربیہ' چینل کا فوٹو گرافر ماھر المر بھی گولی لگنے سے زخمی ہو گیا۔ کل ہفتے کو ہونے والے پرتشدد مظاہروں میں کم سے کم ایک سیکیورٹی اہلکار ہلاک اور 238 مظاہرین زخمی ہوئے ہیں۔

گذشتہ ہفتے بیروت بندرگاہ پر ہونے والے خونی دھماکوں کے بعد بڑی تعداد میں شہریوں نے حکومت کی نااہلی کے خلاف احتجاج کیا۔ مظاہرین نے صدر میشل عون اور وزیراعظم حسان دیاب کے استعفے کے لیے نعرے لگائے۔

خیال رہے کہ گذشتہ منگل کو پیش آنے والے سانحے میں اب تک 158 افراد ہلاک اور 5 ہزا سے زاید زخمی ہو گئے ہیں۔

کل ہفتے کے روز ہونے والے مظاہروں کے دوران پولیس نے مظاہرین کے خلاف آنسوگیس کی شیلنگ اور براہ راست فائرنگ کی جس کے نتیجے میں کم سے کم 238 مظاہرین زخمی ہوئے ہیں۔ لبنانی ریڈ کراس کے مطابق 70 سے زاید زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ احتجاج کے دوران العربیہ کا ایک فوٹو گرافر بھی گولی لگنے سے زخمی ہو گیا۔