.

یواے ای کے لبنانی مکینوں کا دبئی کے ہوائی اڈے پر گُل دستوں سے خیرمقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں تباہ کن دھماکے کے پانچ روز بعد دبئی کے ہوائی اڈے پر اُترنے والے امارات کے مکین لبنانی شہریوں کا بھرپور انداز میں گل دستوں سے خیرمقدم کیا گیا ہے۔

لبنانی مسافر جب دبئی کے ایک ہوائی اڈے پر پہنچے تو سکیورٹی حکام نے انھیں سفید پھول پیش کیے اور انھیں خلیج تعاون کونسل کے رکن ممالک کے لیے مخصوص قطار استعمال کرنے کی اجازت دی ہے تا کہ ان کی آمد اور باہر نکلنے کا عمل تیز رفتاری سے مکمل ہو سکے۔

سوشل میڈیا پربعض صارفین اماراتی افسروں کی لبنانی مسافروں کو پھول پیش کرتے وقت کی تصاویر پوسٹ کی ہیں اور متحدہ عرب امارات کے لبنان کے ساتھ اس اظہار یک جہتی کو سراہا ہے۔

بیروت کی بندرگاہ کے نزدیک چار اگست کو تباہ کن دھماکے کے نتیجے میں شہر میں بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ہے۔ لبنانی حکام نے اب تک بیروت بندرگاہ پر امونیم نائٹریٹ کے گودام میں تباہ کن دھماکے کے نتیجے میں 158 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے اور چھے ہزار سے زیادہ افراد زخمی ہوئے ہیں۔

بیروت کے گورنرمروان عبود کے مطابق دھماکے کے بعد ہزاروں عمارتیں تباہ ہونے سے کم سے کم تین لاکھ افراد بے گھر ہوگئے ہیں۔