.

بیروت دھماکوں سے سات ماہ قبل شام میں ایسے ہی دھماکوں کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ذرائع ابلاغ نے دعویٰ کیا ہے کہ 4 اگست 2020ء کو لبنان کے دارالحکومت بیروت کی بندرگاہ پر ہونے والے دھماکوں سے سات ماہ قبل ایسا ایک واقعہ شام میں پیش آ چکا ہے۔

امریکا کے Trunews نیٹ ورک کی طرف سے جاری کردہ ایک فوٹیج میں شام میں ہونے والے ایسے ہی دھماکوں کا دعویٰ کیا گیا ہے جیسا کہ چار اگست منگل کی شام بیروت بندرگاہ پر پیش آیا ہے۔

ویڈیو میں یہ دعویٰ بھی کیا گیا ہے کہ شام میں ہونے والے دھماکوں کے بعد ان سے اٹھنے والے دھوئیں کا رنگ ایسا ہی تھا جیسا کہ بیروت بندرگاہ پر ہونےوالے دھماکوں کا تھا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دمشق میں ہونے والے دھماکے کافی حد تک بیروت بندرگاہ کے دھماکوں سے مماثلت رکھتے ہیں۔ ان دھماکوں نے کئی سوالات کو جنم دیا ہے۔

بیرت دھماکوں کے بارے میں دو آرا پائی جا رہی ہیں۔ ایک یہ کہ اس جگہ پر المونیم نائٹریٹ کو ذخیرہ کیا گیا تھا جب کہ دوسری رائے کے مطابق یہاں پر حزب اللہ کا اسلحہ کا گودام تھا۔

لبنانی عوام نے اس ان خونی دھماکوں کی عالمی سطح پر تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔