فرانس کا ایران سے لبنان میں‌غیرملکی مداخلت بند کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

لبنانی دارالحکومت بیروت میں گذشتہ ہفتے ہونے والے قیامت خیز دھماکوں کے بعد فرانسیسی صدرعمانوئل میکروں نے بدھ کے روز اپنے ایرانی ہم منصب حسن روحانی سے ٹیلیفون پر بات چیت کی۔ انہوں‌ نے ایرانی صدر پر لبنان میں غیرملکی مداخلت بند کرنے پر اور دیا اور ساتھ ہی خبردار کیا کہ بیروت میں بیرونی مداخلت سے لبنان کی سالیمت اور استحکام مزید خطرات سے دوچار ہو جائے گا۔

فرانسیسی ایوان صدر کے ایک بیان کے مطابق صدر میکروں نے لبنان میں جاری حالیہ کشیدگی کو کم کرنے اور تمام فریقین کو صبرو تحمل کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں‌ نے کہا کہ بیروت میں بیرونی مداخلت کا سلسلہ بند ہونا چاہیے۔ لبنان کو اس وقت ایک ایسی حکومت کی ضرورت ہے جو ملک کو موجودہ بحران سے نکال سکے۔ لبنان میں نئی حکومت کی تشکیل میں کسی غیرملکی قوت کا ہاتھ نہیں‌ ہونا چاہیے۔

انہوں نے لبنانی عوام کی امداد کے لیے بین الاقوامی ڈونرز کانفرنس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کے قائم کردہ فریم ورک کے اندر رہتے ہوئے بیروت کی مدد کی جا سکتی ہے۔

فرانسیسی صدر نے اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پوتین کے ساتھ بھی رابطے میں لبنان کی صورت حال پر بات چیت کی۔ انہو‌ں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے مستقل ممبران کو لبنان اور پورے خطے میں استحکام کے اور حالات کو پرسکون بنانے کے لیے اقدامات کی ضرورت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں