.

سعودی فرماں روا شاہ سلمان آرام کی غرض سے نیوم میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود بدھ کے روز تبوک صوبے کے سرحدی علاقے نیوم پہنچ گئے۔ سعودی فرماں روا وہاں آرام کی غرض سے کچھ وقت گزاریں گے۔

اس سے قبل شاہ سلمان بدھ کے روز دارالحکومت ریاض سے روانہ ہوئے تھے۔

سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے نیوم کے منصوبے کا اعلان کیا تھا۔ یہ ایک خصوصی زون ہے جو مصری اور اردنی سرحدوں کے اندر اراضی پر مشتمل ہے۔ یہ تین ملکوں کے درمیان پھیلا ہوا پہلا زون ہو گا۔ اس منصوبے پر 500 ارب ڈالر سے زیادہ لاگت آئے گی۔ اس کی فنڈنگ میں سرکاری سرمایہ کاری فنڈ کے ساتھ مقامی اور عالمی سرمایہ کار شریک ہوں گے۔

نیوم کا علاقہ سعودی عرب کے شمال مغرب میں 26500 مربع کلو میٹر کے رقبے پر واقع ہے۔ یہ مملکت کے شمال مغرب سے لے کر بحیرہ احمر اور خلیج عقبہ پر 468 کلو میٹر تک پھیلا ہوا ہے۔ مشرق کی جانب سے اس کے اطراف 2500 میٹر بلند پہاڑ واقع ہیں۔

نیوم ایک ایسے تزویراتی علاقے میں واقع ہے جہاں دنیا کی آبادی کا تقریبا 70% حصہ زیادہ سے زیادہ 8 گھنٹوں کے اندر پہنچ سکتا ہے۔ نیوم کمپنی کے چیف ایگزیکٹو انجینئر نظمی النصر کے مطابق نیوم سے روم کا فضائی راستہ 3 گھنٹوں کا ہے جب کہ لندن یہاں سے صرف 5 گھنٹے کی دوری پر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں