پرانے حرم نبویﷺ کو نمازیوں کے لیے کھولنے کی خبروں کی تردید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

مسجد نبوی کے انتظامی امور کے ذمہ دار ادارے کے ترجمان جمعان العسیری نے ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے جن میں کہا گیا ہے کہ انتظامیہ نے پرانے حرم نبویﷺ کو زائرین اور نمازیوں کے لیے کھول دیا ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ پرانے حرم نبویﷺ کو کھولنے کی خبر 1428ھ یعنی آج سے 13 سال پرانی ہے۔ اس وقت پرانے حرم نبویﷺ نمازیوں اور زائرین کے لیے 24 گھںٹے نہیں کھولا گیا۔

جمعان العسیری کا کہنا ہے کہ مسجد نبویﷺ کو نماز عشا کے ایک گھنٹے بعد بند کردیا جاتا ہے اور نماز فجر سے ایک گھنٹہ قبل کھولا جاتا ہے۔ جہاں پر پرانے حرم نبویﷺ میں‌ نماز کا تعلق ہے تو وہاں صرف انتظامیہ کے افراد کو نماز ادا کرنے یا نماز جنازہ کی اجازت ہے۔

العسیری کا کہنا تھا کہ مسجد نبویﷺ کی انتظامیہ محکمہ صحت کی طرف سے وضع کردہ 'ایس اوپیز' پر سختی سے عمل درآمد کر رہی ہے تاکہ روضہ رسولﷺ پر حاضر ہونے والے مسلمان اور مسجد نبویﷺ کے نمازی کسی قسم وبا سے محفوظ سے رہیں۔

ادھر کل جمعرات کے روز سعودی وزارت صحت نے بتایا کہ پچھلے 24 گھںٹوں میں کروناکے 1287 نئے کیسز کی تصدیق کی ہے جس کے بعد مملکت میں متاثرہ افراد کی تعداد 303973 ہوگئی ہے۔ مملکت میں کرونا سے مزید 42 افراد جاں‌بحق جب کہ 1385 صحت یاب ہوئےہیں۔ کل اموات 3548 ہو چکی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں