طرابلس میں تین شامی اجرتی جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

لیبیا میں جہاں ایک طرف قومی وفاق حکومت کی صفوں میں شدید اختلافات سامنے آئی ہیں وہیں دارالحکومت طرابلس میں نیشنل آرمی کے وفادار افراد کی فائرنگ سے قومی وفاق ملیشیا کو بھی بھاری جانی اور مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق طرابلس میں نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے تین شامی اجرتی جنگجو ہلاک ہو گئے۔ ان کی مزید شناخت نہیں‌ کی جا سکی تاہم یہ معلوم ہوا ہے کہ انہیں ترکی نے لیبیا میں لڑائی کے لیے بھرتی کرنے کے بعد طرابلس بھیجا تھا۔

نیشنل آرمی کے میڈیا سینٹر کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ الدریبی کے مقام پر نامعلوم مسلح افراد نے شامی جنگجووں پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں تین جنگجو ہلاک ہو گئے۔ ادھر طرابلس میں حکومت نواز ملیشیا کے الیرموک کیمپ میں زور دار بم دھماکوں کی بھی اطلاعات ہیں۔

ادھر اتوار کے روز لیبی فوج نے مصراتۃ میں قومی وفاق حکومت کے وزیر داخلہ فتحی باشاغا کی وفادار ملیشیائوں‌کی موجودگی پر کڑی تنقید کی تھی۔ فوج کا کہنا تھا کہ مغربی لیبیا میں بدامنی اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں گہری تشویش کا باعث ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں