.

یمنی حکومت کا اقوام متحدہ کے امن مشن کا صدر دفتر الحُدیدہ منتقل کرنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی وزارت خارجہ نے ملک میں قائم اقوام متحدہ کے امن مشن کے صدر دفتر کو ساحلی شہر الحدیدہ منتقل کرنے پر زور دیا ہے۔
العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمنی وزیر خارجہ محمد الخضرمی نے ایک بیان میں کہا کہ انہوں‌ نے یمن میں اقوام متحدہ کے امن مشن کو ایک مکتوب ارسال کیا ہے جس میں ان سے کہا ہے کہ وہ 'یو این' مشن کا صدر دفتر الحدیدہ منتقل کریں۔

یمنی وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا اقوام متحدہ کے امن مشن کی ذمہ داریوں میں رکاوٹیں کھڑی کر رہی ہے۔ یو این امن مشن کو صنعا سے کسی غیر جانب دار مقام بالخصوص الحدیدہ منتقل کرنا ہو گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ حوثی ملیشیا کی طرف سے امن مشن کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرنے سے اقوام متحدہ کا امن مشن بے کار ہو کر رہ گیا ہے اور اس کی کوششوں غیر موثر ثابت ہو رہی ہیں۔

الخضرمی کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا کی طرف سے الحدیدہ میں جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری ہے اور جولائی میں سات ہزار378 خلاف ورزیوں کا ارتکاب کیا گیا۔

یمنی وزیر خارجہ نے اقوام متحدہ کی طرف سے حوثیوں کی انسانی حقوق کی پامالیوں پر خاموشی پر کڑی تنقید کی اور کہا کہ ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے ہاتھوں بحیرہ احمر کے کنارے آٹے کی ملیں بھی محفوظ نہیں اور وہ آئے روز جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہیں مگر اقوام متحدہ حوثیوں کے جرائم پر خاموش تماشائی ہے۔