.

اقتصادی شعبے کھولنے کا فیصلہ مثبت اور کامیاب رہا:سعودی وزیر خزانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر خزانہ محمد الجدعان نے نے کہا ہے کہ حکومت نے اقتصادی شعبے کھولنے کا درست فیصلہ کیا۔ اس فیصلے کے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں۔ انہوں نے ورچوئل "یوروومنی" کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ مملکت کی معیشت نے بہت سے شعبوں میں ترقی کا آغاز کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وژن 2030 نے پھل دینا شروع کردیا ہے۔ ہم نے سیاحت ، تفریح ، مالیاتی اور تکنیکی شعبے میں ترقی حاصل کی ہے۔ 2020 میں ترقی 3 سے 8 فیصد کے درمیان رہی ۔ ہم نے جی 20 سربراہی اجلاس کی صدارت سنبھالی اور ایک بہت مضبوط ایجنڈا طے کیا۔ پھر کرونا آیا اور سعودی عرب سمیت سب کو متاثر کیا اور تیل کی قیمتیں گر گئیں۔ مملکت کی آمدنی میں کمی آئی ہے لیکن تیل کی قیمتوں پر قابو پایا جا سکتا ہے۔

الجدعان نے انہوں نے زور دے کر کہا کہ امریکا نے کرونا وبا کا منہ توڑ جواب دیا اور وبا کو کنٹرول کرنے کے لیے بہت سے اقدامات اٹھانے ہیں۔

انہوں‌ نے کہا کہ کرونا وبا کے باوجود ہم نے بہت سے معاشی شعبے کھولے ہیں اور ان کے انتہائی مثبت اور نتائج سامنے آئے ہیں۔

الجدعان نے کہا کہ ہم نے ایک مضبوط مالی پالیسی کے ساتھ سال کا آغاز کیا۔ سعودی عرب مشرق وسطی کی سب سے بڑی معیشت ہے اور اس میں قابل ذکر دولت ، بہت بڑی سرمایہ کاری ، اور قابل ذکر ملکی اور غیر ملکی ذخائر ہیں۔ ہم نے قرضوں کی منڈیوں میں جانے کی اپنی صلاحیت کو استعمال کیا اور قرض کی حد کو جی ڈی پی میں 30 فیصد سے بڑھا کر 50 فیصد کر دیا۔ ہم مقامی منڈیوں میں گئے اور مجھے خوشی ہوئی کہ مقامی مارکیٹ کی گہرائی نے ہمیں لیکویڈیٹی کو متاثر کیے بغیر سرکاری قرض جمع کرنے کا موقع دیا۔ ہم عالمی منڈیوں میں بھی گئے اور سرمایہ کاروں نے ہمارا خیرمقدم کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں