.

متحدہ عرب امارات کا اسرائیل اور بحرین میں امن معاہدے کے اعلان کا خیر مقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے خلیجی ملک بحرین اور اسرائیل کے درمیان دو طرفہ امن معاہدے کے اعلان کا خیر مقدم کیا ہے۔ خیال رہے کہ بحرین ایک ماہ میں اسرائیل کو تسلیم کرنے والا دوسرا خلیجی ملک بن گیا ہے۔ اس سے قبل 13 اگست 2020ء کو متحدہ عرب امارات نے اسرائیل کے ساتھ تعلقات استوار کرلیے تھے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ‌ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ بحرینی مملکت اور کا اسرائیل کو تسلیم کرنا اور اسرائیل کے ساتھ امن معاہدے کا اعلان مثبت سمت میں اہم قدم ہے۔ اس اقدام سے خطے اور پوری دنیا میں امن کےقیام کے لیے ماحول سازگار بنانے میں مدد ملے گی۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اسرائیل اور بحرین میں معاہدہ خطے میں یقینی امن اور خوش حالی کا ذریعہ ثابت ہوا۔ اس کے نتیجے میں خطے کے ممالک کےدرمیان اقتصادی، ثقافتی، سائنسی اور سفارتی شعبوں میں تعاون کو فروغ ملے گا۔

خیال رہے کہ کل جمعہ کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بحرین اور اسرائیل کے درمیان امن معاہدے کا اعلان کیا۔ انہوں‌نے دونوں ملکوں کےدرمیان امن سمجھوتے کے اعلان کو امن کی طرف اہم پیش رفت قرار دیا۔